54

مزدردی کی رقم مانگنے پر تھانہ سیت پور کی حدود موضع لتی کے رہائشی نوجوانوں پر، سرگودھا کے رہائشی بااثر افراد کا تشدد، غریب مزدور نوجوانوں کے سر کے بال، مونچھیں، بھنویں اور داڑھی مونڈھ ڈال

مزدردی کی رقم مانگنے پر تھانہ سیت پور کی حدود موضع لتی کے رہائشی نوجوانوں پر، سرگودھا کے رہائشی بااثر افراد کا تشدد، غریب مزدور نوجوانوں کے سر کے بال، مونچھیں، بھنویں اور داڑھی مونڈھ ڈال
سرگودھا کے رہائشی بااثر افراد، آصف، قدیر اور نواب نے اپنے نامعلوم ساتھیوں کے ہمراہ، سرگودھا میں اپنی ہی عدالت لگا لی ،علی پور کے تھانہ سیت پور کی حدود لتی کے رہائشی نوجوانوں ،محمد کاشف، حافظ محمد بلال اور محمد عامر کو تشدد کا نشانہ بنایا اور سر کے بال، مونچھیں ،بھنویں اور داڑھی مونڈھ ڈالی ،بااثر افراد نوجوانوں کی وڈیو بھی بناتے رہے اور سوشل میڈیا پر اپلوڈ کر دی، متاثرہ نوجوانوں اور ان کے والد نے علی پور پہنچ کر میڈیا کو موقف دیتے ہوئے بتایا کہ، آصف نامی ٹھیکیدار ہمیں مالٹے کے باغ میں مزدوری کرانے کے لئے لے گیا، ہم نے دو ماہ وہاں مزدوری کی، ہماری مزدوری 50 ہزار سے زائد بقایا بچی، جس کا مطالبہ ہم نے کیا اور اپنے گھر آنے کا کہا تو ٹھیکیدار نے ہمیں پیسے دینے سے انکار کر دیا اور مزید کام کرنے کا کہا، ہم اپنا سامان لے کر وہاں سے چلے گئے تو انہوں نے ہمیں راستے میں روک لیا اور مزدوری دینے کا کہہ کر ہمیں ساتھ لے آئے، اور ہمیں تشدد کا نشانہ بنایا اور ہمارے سروں کے بال، مونچھیں، بھنویں اور داڑھی مونڈھ ڈالی اور وڈیو بنا کر سوشل میڈیا پر واٹرل کر دی ،متاثرہ نوجوانوں کے والد نے بتایا کہ مجھے اطلاع ملی تو میں وہاں گیا اور ان لوگوں کی منت سماجت کی آٹھ ہزار روپے بھی انہوں نے مجھ سے لئے تو میں اپنے بچوں کو لے کر واپس علی پور پہنچا ہوں، متاثرہ افراد اور علاقہ مکینوں نے ٹھیکیدار کی غنڈہ گردی کے خلاف احتجاج کیا اور اعلیٰ حکام سے انصاف فراہم کرانے کا مطالبہ کیا ہے،

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں