31

سینیر صحافی راجہ طارق کو 9 ماہ سے تنخواہوں کی عدم ادائیگی کے بعد صحافتی تنظیمیں متحرک

کراچی (اسٹاف رپورٹر)جرنلسٹ ایکشن کمیٹی کا اہم اور ہنگامی اجلاس نامور صحافی اور کرائم رپورٹر ایسوسی ایشن کے جنرل سیکریٹری راجہ طارق کی المناک اور اچانک وفات پر گذشتہ روز مرکزی آفس میں منعقد ہوا اجلاس میں مرحوم کے درجات کی بلندی اور مغفرت کیلئے خصوصی دعا کرتے ہو ئے فیصلہ کیا گیا کہ مرحوم راجہ طارق کے لواحقین کو انکے ادارے نیوز ون سے تمام واجبات اور حقوق کی فوری ادائیگی کیلئے کردار ادا کیا جائے گا اس دوران نجی ٹی وی چینل نیوز ون میں گذشتہ کئی ماہ سے تنخواہوں کی عدم ادائیگی پر سخت تشویش اور افسوس کا اظہار کیا گیا اجلاس کے دوران نیوز ون میں خدمات سرانجام دینے والے ایک سینئر اور ذمہ دار صحافی نے بتایا نیوز ون کی انتظامیہ نے گذشتہ چار ماہ سے ملازمین کو تنخواہ ادا نہیں کی جبکہ 2019 کی تین ماہ کی تنخواہوں کی ادائیگی بھی تاحال نہیں کی گئی مذکورہ صحافی کے مطابق نیوز ون کے مالکان نے ذاتی مفادات کی تکمیل کیلئے چند بااثر اور لیڈر نما صحافیوں کو اہم عہدوں پر تعینات کر رکھا ہے جنہیں انکی اہلیت کے برعکس بھاری تنخواہیں ہر ماہ باقاعدگی سے ادا کی جارہی مذکورہ مبینہ لیڈر نا صحافی ناصرف چینل میں کام کرنے والے صحافیوں بلکہ دیگر ملازمین کو دلا سے دینے کے ساتھ ساتھ حراساں بھی کررہے ہیں اس دوران اگر کوئی صحافی تنظیم احتجاج کی کال دیتی ہے کہ مالکان کے سہولت کار روایتی کردار ادا کرتے ہوئے ناکام بنا دیتے ہیں اجلاس کے دوران میڈیا مالکان کے ظلم کے شکار ایک صحافی جو جذبات پر قابو نہ رکھتے ہوئے آبدیدی ہوگئے اجلاس کے شرکاء کو بتایا کہ متعدد ٹی وی چینلز اور اخبارات مالکا ن طویل عرصے سے ملازمین کو بروقت تنخواہوں کی ادائیگی سے قاصر ہیں انھوں نے کراچی پریس کلب اور بعض صحافی تنظیوں کے اہم لیڈران کو بھاری تنخواہوں پر نماشی عہدوں پر بیٹھا رکھا ہے جو صحافیوں کو درپیش مشکلات اور انکے بنیادی مسائل کے حل کی بجائے ظالم اور جابر مالکان کی سہولت کاری کرتے ہیں مذکورہ لیڈران الیکشن کے دوران صحافیوں کو گمراه کرکے ووٹ لیتے ہیں اجلاس میں یہ بھی انکشاف ہوا کہ کراچی پریس کلب میں جماعتی گروپ قابض ہے جبکہ پریس کلب میں بڑی تعداد میں مختلف مذہبی اور سیاسی جماعتوں کے علاوہ لسانی اور کالعدم تنظیموں سے تعلق رکھنے والے افراد کو بھی ممبر شب دی گئی دوسری جانب ایسے سینئر صحافیوں کو مذکورہ بااثر ٹولے نے ممبر شپ سے محروم رکھا جو عام صحافیوں کے حقوق کی بات کرنے کا جرم کرتے تھے جبکہ دہشت گردی اور سنگین مقدمات میں ملوث افراد آج بھی پریس کلب کے ممبران میں شامل ہیں اجلاس میں نیوز ون چینل کی انتظامیہ سے اپیل کی گئی کہ تمام ملازمین جن میں پیشہ ور صحافی اور دیگر کارکنان شامل ہیں تمام واجبات کی فوری ادائیگی کو یقینی بنایا جائے بصورت دیگر جرنلسٹ ایکشن کمیٹی بھرپور احتجاج کرے گی جو تنخواہوں کی باعزت اور مکمل ادائیگی تک جاری رہے گا اجلاس میں نامور صحافی راجہ طارق کے دل کے دورے سے جاں بحق ہونے کے واقعہ کو قتل قرار دیتے ہوئے فیصلہ کیا گیا کہ اگر تنخواہوں کی عدم فراہی ، مالکان کے ظلم ناانصافی یا ذھنی تشدد کے صدمہ سے کوئی صحافی یا کارکن جان کی بازی ہارا تو متعلقہ ادارے کے مالکان کے خلاف ایف آئی آر درج کرائی جائے گی جرنلسٹ ایکشن کمیٹی اس سلسلے میں عدالتی کاروائی کا حق بھی محفوظ رکھتی ہے اجلاس میں جرنلسٹ ایکشن کمیٹی کے اراکین راؤ محمد جمیل ، سید جعفر ، عرفان ساگر ، مخدوم عادل ، ملک منور ، افضل سندھو اور ندیم احمد پر مشتمل ایک ٹیم تشکیل دی گئی جو دیگر ٹی وی چینلز اور اخبارات میں کام کرنے والے صحافیوں اور کارکنان سے رابطے کرکے تنخواہوں کی عدم فراہمی اور انہیں در پیش مسائل سے آگاہی حاصل کرکے جرنلسٹ ایکشن کمیٹی کے آئندہ اجلاس میں پیش کرے گی جبکہ اس سلسلے میں وکلاء سے مشاورت کے ساتھ ساتھ پریس کلب کے صحافی ممبران اور ایسے صحافی جو مختلف اخبارات اور چینلز کے مالک اور ملازمین کو واجبات بروقت ادا کرتے ہیں اس جدوجہد میں شامل کرنے کیلئے کردار ادا کرے گی اجلاس میں جرنلسٹ ایکشن کمیٹی کے تمام رہنماؤں، ممبران اور پریس کلب کے علاوہ مختلف صحافتی تنظیموں کے متعدد اہم صحافی شخصیات نے بھی شرکت کی.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں