53

ایجنسیوں کے اشارے پر نون لیگ چھوڑنے والے جنرل عبدالقادر بلوچ سابق وزیر اعلی ثنا اللہ زھری سمیت ساتھیوں دبئئ اجلاس میں اگلا پڑائو پیپلزپارٹی میں کرنے کا فیصلہ

*کوئٹہ*

*آج دبئی میرج حال کوئٹہ میں (ر)جنرل عبدالقادر بلوچ کی زیرصدارت مشاورتی اجلاس* *منعقد ہوا اجلاس میں نواب ثناءاللہ خان زہری اور جنرل(ر) عبدالقادر بلوچ کے ہم خیال سیاسی کار کنوں نے مشاوراتی اجلاس میں سینکڑوں کی تعداد میں شرکت کی اس موقع پر چیف آف جھالاوان نواب ثناءاللہ زہری ویڈیو لینک سے خطاب کی اور ( ر ) جنرل عبدالقادر بلوچ نے* *اجلاس سے خطاب کیا اور انہوں نے ماضی اور موجودہ تمام سیاسی صورت حال کو سیاسی کارکنوں کے سامنے پیش کی اور ایجنڈ میں سیاسی کارکنوں کو کہا کے اس وقت ملک کی مرکزی پارٹیاں جی یو آئی، پی ٹی آئی، مسلم لیگ ن اور پاکستان پیپلز پارٹی ہیں ان میں سے کس پارٹی میں ہم شامل ہوجائے ؟ یا ہم آپنا الگ پارٹی بنائے جو فیصلہ آپ کار کنان آکثریت کے ساتھ دینگے میں اور نواب صاحب آپکے فیصلہ کو ہر صورت قبول کرینگے اجلاس نے سو پرسنٹ پاکستان پیپلز پارٹی میں شمولیت کرنے کی فیصلہ کرلیا اس موقع پر اجلاس سے میر عبدالرحمان زہری ، ڈاکٹر* *حضوربخش زہری،نوابزادہ امیر شہر یار نوشیروانی، سردار چنگیز ساسولی آغا حسن شاہ، محمد بزنجو، جمعہ خان شکرانی، عبداللہ آزاد سابقہ ایم پی اے کشور جتک فوزیہ ایڈووکیٹ ودیگر نے خطاب کی۔*
*اس موقع پر میر عبدالوہاب زہری، میر نبی بخش بنگلزئی، حاجی گل محمد جتک، حاجی عظمت جتک، عید محمد ایڈووکیٹ، فیصل زہری، میر بابل زہری، میر ثناءاللہ زہری، نصراللہ شاہوانی، عبیداللہ قمبرانی، عبداللہ آزاد، میر علی احمد جتک، وڈیراہ مولابخش جاموٹ، آبو ہریرہ جتک، ضیاء شفی، واڈیراہ ارباب علی زہری،عبدالحی زہری، زاہد زہری، عبدالحمید زہری، عاشق زیب زہری، اسد زہری میر سالار پندرانی ودیگر بڑی تعداد میں موجود تھے**

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں