27

معصوم بچی کو چھوٹی سی شرارت پر ملی دردناک سزائے موت ‏وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں 5 سالہ معصوم بچی زلیخا کا ہولناک قتل؛ ملزمہ کا شوہر گرفتار

‏معصوم بچی کو چھوٹی سی شرارت پر ملی دردناک سزائے موت

‏وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں 5 سالہ معصوم بچی زلیخا کا ہولناک قتل؛ ملزمہ کا شوہر گرفتار

‏5 مئی کو زلیخا پڑوس میں اپنی رشتہ دار کے گھر کھیلنے گئی جب وہ گھر کا فرش دھو رہی تھی

معصوم بچی سے کوہی شرارت سرزد ہوئی جس پر اس کی رشتہ ‏دار عورت نے زلیخا کو زور دار چانٹا رسید کر دیا اور معصوم پھول سی بچی کسی خزاں رسیدہ پتے کی طرح دیوار سے جا ٹکرائی

اس کے سر پر شدید چوٹیں آئیں اور اس کے ناک و کانوں سے خون بہنا شروع ہوگیا

اس پر اس درندہ نما عورت نے بچی کو ہسپتال لیجانے بجائے گھر کے کونے میں پڑے خراب فریج میں ‏ڈال دیا اور کام کاج میں مصروف ہوگئی

اس دوران معصوم زلیخا خون بہہ جانے اور دم گھٹنے سے موت کی گہری وادی میں اتر گئی

بعد ازاں معصوم بچی کے والدین و اس ظالم عورت و شوہر نے رات کی تاریکی میں اس ننھے سے مردہ وجود کو چادر میں لپٹا اور گاڑی میں ڈال کر گجر خان لے گئے جہاں اسکو بغیر ‏جنازہ پڑھائے خاموشی سے منوں مٹی تلے دفن کر دیا

عید کی چھٹیوں دوران عظیم ٹاؤن میں پٹرولنگ کرنے والی پولیس پارٹی کو مخبر نے اس گھناؤنے فعل کی اطلاع دی جس پر سہالہ پولیس نے فوری ایکشن لیا اور قتل کا مقدمہ درج کرتے ہوئے اس خاتون کے شوہر کو گرفتار کرلیا جبکہ وہ خاتون روپوش ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں