42

افغان ٹرانزٹ ٹریڈ کو بڑھانے اور کاروبار میں آسانیاں پیدا کرنے کے لیے پاک افغان بارڈر پر نیا ٹرمینل قائم کیا جا رہا ہے۔ اسپیکر قومی اسمبلی

افغان ٹرانزٹ ٹریڈ کو بڑھانے اور کاروبار میں آسانیاں پیدا کرنے کے لیے پاک افغان بارڈر پر نیا ٹرمینل قائم کیا جا رہا ہے۔ اسپیکر قومی اسمبلی

نئے ٹرمینل کے قیام سے معاشی سر گرمیوں میں اضافہ اور مقامی لوگوں کے لیے روزگار کے نئے مواقع پیدا ہونگے۔ اسد قیصر

اسلام آباد؛ : اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کی زیر صدارت اہم اجلاس منعقد ہوا.اجلاس میں نمائندہ خصوصی برائے افغانستان صادق خان اور مشیر وزیراعظم ارباب شہزاد سمیت ارکان اسمبلی اورممبر کسٹم سمیت اہم حکام نے شرکت کی۔ اجلاس میں افغان ٹرانزٹ ٹریڈ کو بڑھانے اور کاروبار میں آسانیاں پیدا کرنے پر غور کیا گیا۔

اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے کہا کہ افغانستان کے ساتھ کاروبار کے وافر مواقع موجود ہیں۔ان مواقعوں سے دونوں جانب کی عوام بھرپور فائدہ اٹھا سکتی ہیں۔اسی سلسلے کو مزید وسعت دینے کی خاطر پاک افغان سرحد پر ایک نیا ٹرمینل قائم کیا جا رہا ہے۔ اس ٹرمینل سے کاروبار اور تجارت کے بڑھنے کے ساتھ ساتھ ان میں حائل رکاوٹوں کا خاتمہ بھی ممکن ہو سکے گا۔

اسپیکر قومی اسمبلی نے کہا کہ نئے ٹرمینل کے قیام سے معاشی سر گرمیوں میں اضافہ اور مقامی لوگوں کے لیے روزگار کے نئے مواقع پیدا ہونگے۔اسپیکر نے کہا کہ ٹرمینل کے قیام کا بنیادی مقصد تاجروں، کاروباری برادری اور سرحدی علاقوں میں رہنے والے لوگوں کو سہولیات فراہم کرناہے۔ انہوں نے کہا کہ انشااللہ خیبر پختونخواہ ایک صنعتی صوبہ بنے گا۔ صوبے میں صنعتوں کے فروغ سے ملک کی ترقی میں اہم کردار ادا کرنے میں مدد ملے گی۔

اسپیکر نے اجلاس کے شرکاء کو افغانستان کے ساتھ کاروبار کے مواقع بڑھانے کے لیے سیکرٹری کامرس سے ہوئی ملاقات کے بارے میں بھی آگاہ کیا۔اسپیکر اسد قیصر نے متعلقہ حکام کو ٹرمینل کا کام جلد از جلد مکمل کرنے کے احکامات دیئے۔

ایف بی آر کے حکام نےاسپیکر کو اس معاملے میں ہر طرح کے تعاون اور مدد کی یقین دہانی کروائی۔اس کے علاوہ دیگر متعلقہ حکام نے بھی اسد قیصر کو ٹرمینل کا کام جلد مکمل کرنے اور ٹرمینل کو جلد فنگشنل کرنے کی بھرپور یقین دہانی کرائی۔ 

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں