75

پاکستان کے بد نام زمانہ اینکر پرسن مبشر لقمان کو عمران حکومت کے خلاف ٹویٹ کرنا مہنگا پڑ گیا 

پاکستان کے بد نام زمانہ اینکر پرسن مبشر لقمان کو عمران حکومت کے خلاف ٹویٹ کرنا مہنگا پڑ گیا 

انہوں نے عیدالاضحی کے دن  بجلی جانے کا کیا ٹویٹ کیا کہ ان کا سوشل میڈیا پر شامت آگئی 

مبشر لقمان نے شکایت کی کہ “صبح 5 سے بتی (لائٹ)  نہیں آ رہی۔پہلی مرتبہ عید پر ایسا حال دیکھا ہے، کچھ لمحے کےلئے بیچ میں آئی بھی ہے تو چیزیں جلنے کا خدشہ ہو گیا تھا۔لیسکو کا حکومت تو کچھ کر نہیں سکتی۔۔ اللہ ہی پوچھے گا۔ انہیں۔۔! ” 

ممتاز کالم نگار اور بلاگر محمد بلال غوری نے سماجی روابط کی ویب سائٹ پر ٹویٹر طنزیہ ٹویٹ کیا کہ ” ‏جنہوں نے صحافتی اخلاقیات کی دھجیاں اڑاتے ہوئے کنٹینر پہ چڑھ کر تقریریں کیں ،ان سے کون پوچھے ؟ کم از کم انہیں تو نہیں گھبرانا چاہئے ” 

ایک صارف ماں چودھری کا کہنا تھا کہ ” ‏‎پہلے بتی جانے پر قصور حکومت کا ہوتا تھا اب لیسکو کا ہے 😂😂 یوتھیا ہمیشہ یوتھیا ہی رہتا😂 ” 

خاتون صارف شاھد خان نے تبدیلی کے کیڑے مبشر لقمان کو کھڑی کھڑی سنائیں “‏‎مراد علی شاہ، استعفی دو! ہوتا نا یہ سندھ کے دارالحکومت کراچی میں تو اس وقت حکیم لقمان اور تمام یوتھیئے اور ففتھیئے ماتم برپا کر رہے ہوتے۔ بڑے زور کی تبدیلی آئی ہوئی تھی حکیم صاحب کو بھی۔ اب گاتے رہیں، تبدیلی آئی رے، تبدیلی آئی رے اور برداشت کریں۔ ہور چوپو، حکیم لقمان صاحب!” 

ایک صارف شاھد خان کا کہنا تھا ” ‏‎آپ سے بھی اللہ پاک ہی پوچھیں گے کہ کیسے جھوٹے پروپیگنڈے کر کر کے آپ نااہل لوگوں کے ہاتھ کھلونے کی طرح کھیلتے ریے اور اس ملک کی لُٹیا ڈبو دی نیازی کو حکمران بنا کراب آپ بھی کچھ تو بھگتو ہم تو چاروناچار بھگت ہی رہے ہیں. لیکن آپ لوگوں کا کردار تاریخ میں ہمیشہ سیاہ حروف میں لکھا ہوگا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں