چینی صدر شی کا سربیا کے سمیڈریوو میں اسٹیل ورکرز کو جوابی خط

بیجنگ (شِنہوا) چین کے صدر شی جن پھنگ نے سربیا کے ایچ بی آئی ایس سمیڈریوو اسٹیل پلانٹ کے کارکنوں کو جوابی خط لکھا ہے۔
اپنے جوابی خط میں چینی صدر شی جن پھنگ نے ان کی حوصلہ افزائی کی کہ وہ چین۔ سربیا دوستی میں نیا کردار ادا کریں۔
انہوں نے کہا کہ 2016 میں سربیا کے سرکاری دورے میں انہوں نے سمیڈریوو اسٹیل پلانٹ میں مزدوروں سے روبرو ملاقات کی تھی جس میں چین۔ سربیا باہمی مفید تعاون میں ان کی معاونت اور اسٹیل پلانٹ کے روشن مستقبل میں ان کی اعلیٰ توقعات کو گہرائی سے محسوس کیا۔
انہوں نے کہا کہ کارکنوں کے خط سے انہیں علم ہوا کہ دونوں اطراف کی انتظامی ٹیمیں اور خود کارکنوں کی مشترکہ کاوشوں سے اسٹیل پلانٹ ایک نئی شکل اختیار کرچکا ہے جس سے سمیڈریوو شہر کی ترقی میں مستحکم معاونت میسر آئی۔
چینی صدر نے کہا کہ انہیں یہ جان کر بہت خوشی ہوئی ہے کہ اسٹیل پلانٹ میں چینی مالی تعاون سے چلنے والے ایک ادارے کی سرمایہ کاری کے بعد اس کا نقصان تیزی سے منافع میں بدل گیا ہے جس سے 5 ہزار سے زائد عملے کو ملازمت کا تحفط ملا اور ہزاروں خاندان پرامن اور خوشگوار زندگی سے لطف اندوز ہوئے۔
انہوں نے کہا کہ اسٹیل پلانٹ کی ترقی ان مزدوروں کی لگن اور محنت کے بغیر حاصل نہیں کی جا سکتی جو اسٹیل پلانٹ کی تیز رفتار ترقی کے لئے تندہی سے کام کررہے ہیں جبکہ یہ محنت کش چین اور سربیا کے درمیان آہنی دوستی کا ایک نیا باب رقم کررہے ہیں۔
چینی صدر نے جوابی خط میں محنت کشوں کی حوصلہ افزائی کرتے ہوئے ان کی تعریف بھی کی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں