100

مسلسل لوڈشیڈنگ کےخلاف اسلام آباد میں احتجاج کرنے والوں کےخلاف ایف آئی آردرج مظاہرین نےجی ٹی روڈ بندکرکےٹریفک جام پتھراؤ کرکے گاڑیوں کونقصان بھی پہنچایا

مسلسل لوڈشیڈنگ کےخلاف اسلام آباد میں احتجاج کرنے والوں کےخلاف ایف آئی آردرج مظاہرین نےجی ٹی روڈ بندکرکےٹریفک جام پتھراؤ کرکے گاڑیوں کونقصان بھی پہنچایا

وفاقی دارالحکومت اسلام آباد حلقہ این اے 54 ڈھوک عباسی اور ڈھوک پراچہ واپڈا کی مسلسل لوڈشیڈنگ کے خلاف احتجاج کرنے والوں کے خلاف تھانہ ترنول میں ایف آئی آر درج کرلی گئی گزشتہ روز مغرب کے بعد ڈھوک عباسی سرائے خربوزہ اور ڈھوک پراچہ کی عوام نے لوڈ شیڈنگ سے تنگ آکر مین جی ٹی روڈ پشاور روڈ کو دونوں اطراف سے بند کر دیا روڈ بند اور ٹریفک جام ہونے کے بعد تھانہ ترنول ایس ایچ او بھاری نفری کے ہمراہ موقع پر پہنچ گئے اس کے ساتھ ساتھ ٹریفک پولیس کے افسران بی پہنچ گئے چونکہ کے عوام نے غیر قانونی طور پر روڈ بند کیا گاڑیوں کے شیشے توڑے اور پتھراؤ کیا جس کی وجہ سے پولیس نے متاثرین کے خلاف ایف آئی آر درج کر لی

پولیس کا موقف اپنی جگہ پر درست ہے مقامی سیاسی نمائندوں کے ساتھ ساتھ اسد عمر کی ناقص حکمت عملی کی وجہ سے عوام کار روڈ پر آنا معمول بن چکا ہے

اسد عمر کے حلقہ کی عوام آئے روز مین جی ٹی روڈ بند کرکے انصاف کے لئے ذلیل و خوار ہوتے نظر آتے ہیں

اور کبھی ترقیاتی کام نہ ہونے کی وجہ سے اپنے مطالبات کے لئے روڈ پر نظر آتے ہیں

جس سے موجودہ حکومت پر تو کئی سوال اٹھتے ہیں

اس کے ساتھ ساتھ وفاقی وزیر اسد عمر جو اس حلقہ سے منتخب ہوئے ہیں

اور لوکل سیاسی نمائندگان سب کی ناقص حکمت عملی کی وجہ سے عوام روڈوں پر انے پر مجبور ہو چکی ہے

جہاں تک مقامی پولیس کا کام تھا انہوں نے بہترین حکمت عملی سے حالات کو کنٹرول کیا

بڑے جانی و مالی نقصان سے عوام کو بچا لیا

وفاقی وزیر اسد عمر کو ہوش کے ناخن لینے ہونگے

آئے دن ایسے واقعات رونما ہونے سے کسی وقت بھی بڑا حادثہ رونما ہو سکتا ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں