119

پشاور موٹروے ٹول پلازہ پر ایچ اے ملازم کو کچلنے والے ڈرائیور کو موٹروے اور پشاور پولیس کے گرفتار کی دعوے

پشاور موٹروے ٹول پلازہ پر ایچ اے ملازم کو کچلنے والے ڈرائیور کو موٹروے اور پشاور پولیس کے گرفتار کی دعوے موٹروے پولیس کے پریس ریلیز کے مطابق

این ایچ اے ملازم کو کچلنے والے ڈرائیور کو موٹروے پولیس نے گرفتار کر لیا۔

جنید ولد عتیق گاڑی نمبر PV 401 پر موٹر وے کے ذریعے پشاور کی جانب جا رہا تھا۔

تیز رفتاری کی وجہ سے موٹروے پولیس کی جانب سے روکنے کا اشارہ کیا گیا۔

اشارے کو نظر انداز کرتے ہوئے ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی جاری رکھی۔

خلاف ورزی کی اطلاع موٹر وے ٹول پلازہ پشاور دی گئی۔

ڈرائیور نے موقع سے فرار ہونے کی کوشش میں این ایچ اے کے میڈیکل ہیلپر عدیل علی شاہ کو کچل ڈالہ۔

عدیل کے سر پر شدید چوٹیں آئیں جسے لیڈی ریڈنگ ہسپتال پشاور منتقل کر دیا گیا ۔

موٹروے پولیس نے بروقت کاروائی کرتے ہوئے گاڑی کو رکاوٹ ڈالتے ہوئے قبضے میں لیا۔

ڈرائیور جنید کو موقع سے گرفتار کر لیا گیا۔
نوٹر وے پولیس نے پشاور پولیس کی مدد کا ذکر نہیں کیا ”


‏خلاف ‏تفصیلات کے مطابق جنید ولد عتیق گاڑی نمبر PV 401 پر موٹر وے کے ذریعے پشاور کی جانب جا رہا تھا جسے تیز رفتاری کی وجہ سے موٹروے پولیس کی جانب سے روکنے کا اشارہ کیا گیا ۔لیکن اشارے کو نظر انداز کرتے ہوئے ملزم نے ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہوئے سفر جاری رکھا ۔ اس کی اطلاع موٹر وے ٹول پلازہ پشاور دی گئی جہاں موٹروے پولیس کا عملہ مذکورہ گاڑی کو روکنے کے لیے موجودہ تھا ۔گاڑی نظر آتے ہیں اسے رکنے کا اشارہ کیا گیا لیکن ڈرائیور نے موقع سے فرار ہونے کی کوشش میں (این ایچ اے)نیشنل ہائی وے اتھارٹی کے میڈیکل ہیلپر عدیل علی شاہ. جو کہ موٹر وے پولیس کے عملے سے کچھ ہی فاصلے پر کھڑا تھا کچل ڈالا ۔حادثے کی وجہ سے عدیل کے سر پر شدید چوٹیں آئیں جسے لیڈی ریڈنگ ہسپتال پشاور منتقل کر دیا گیا ۔ موٹروے پولیس نے بروقت کاروائی کرتے ہوئے گاڑی کو رکاوٹ ڈالتے ہوئے قبضے میں لیا اور ڈرائیور جنید کو موقع سے گرفتار کر لیا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں