110

سندھ میں حوالات میں پولیس تشدد سے نوجوان بابر کا قتل ایس ایج او عمران چانڈیو سمیت چھ اہلکار گرفتار

ٹندو اللہ یار میں منشیات فروشی کے الزام میں اٹھائے جانے والے نوجوان کی حوالات سے پھندا لگی نعش نے سندھ پولیس کا ناقص نظام کی قلعی کھول دی ہے اور صوبے میں بڑے پیمانے پر احتجاج کیا جا رہا ہے

ٹنڈو اللہ یار پولیس نے نوجوان بابر کو گرفتار کرنے کے بعد اس کی حوالات سے پھندہ لگی نعش ملی وزثا نے پولیس پر تشدد سے مارنے کا الزام لگایا

ڈپٹی انسپکٹر جنرل پولیس حیدرآباد شرجیل کھرل نے اس واقعہ کی تحقیقات کے لئے 3 رکنی کمیٹی بنائی تھی جس کی رپورٹ آج سامنے آنے کی توقع ہے ایس ایس پی بدین کی سربراہی میں تین رکنی کمیٹی میں ایس ایس پی مٹیاری اور اے ایس پی کینٹ حیدر آباد شامل تھے

حیدر آباد کے ایڈیشنل انسپکٹر جنرل پولیس جمیل احمد نے بتایا ہے کہ رپورٹ آنے کے بعد کارروائی کی جائے گی
اب تک ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق ایس ایچ او عمران سمیت 10 اہلکاروں کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کرلیا گیا ڈی آئی جی کے حکم پر ایس ایچ او عمران چانڈیو سمیت چھ اہلکاروں کو گرفتار کرلیا گیا

آئی جی سندھ مشتاق مہر نے ڈی آئی جی شہید بے نظیر آباد کی سربراہی میں انکوائری کمیٹی بنادی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں