77

سندھ ہائی کورٹ لاپتہ افراد کی بازیابی سے متعلق درخواستوں کا تحریری حکم نامہ جاری عدالت نے حراستی مراکز کی رپورٹ پیش نہ کرنے پر وفاقی سیکریٹری داخلہ کو شوکاز نوٹس جاری کردیا عدالت نے آئندہ سماعت وفاقی سیکریٹری داخلہ کو ذاتی حثیت میں طلب کرلیا

سندھ ہائی کورٹ

لاپتہ افراد کی بازیابی سے متعلق درخواستوں کا تحریری حکم نامہ جاری کردیا گیا

عدالت نے حراستی مراکز کی رپورٹ پیش نہ کرنے پر وفاقی سیکریٹری داخلہ کو شوکاز نوٹس جاری کردیا

عدالت نے آئندہ سماعت وفاقی سیکریٹری داخلہ کو ذاتی حثیت میں طلب کرلیا

آئندہ سماعت پر وفاقی سیکریٹری داخلہ حراستی مراکز کی رپورٹ کی ہمراہ عدالت میں پیش ہوں،عدالت

شہری فرید احمد قادری کی بازیابی سے متعلق درخواست میں وزارت داخلہ نے جواب جمع کرادیا

ہم نے معلومات حاصل کی ہیں لاپتہ شہری رینجرز ،پولیس اور ایف آئی اے کے زیر حراست نہیں ہے،رپورٹ

خیبر پختوں خواہ کے حراستی وزارت داخلہ کے ماتحت نہیں ہیں رپورٹ

حراستی مراکز محکمہ داخلہ کے پی کے ،کے زیر انتظام ہیں،رپورٹ

اس باوجود وزارت داخلہ نے عدالتی حکم نامے سے سیکریٹری داخلہ کے پی کے کو آگاہ کردیا ہے رپورٹ

کے پی کے کے محکمہ داخلہ نے محض روایتی جواب ارسال کردیا ہے رپورٹ

عدالت کا وزارت داخلہ کی رپورٹ پر اظہار حیرت

وزارت داخلہ ایک مظبوط ترین وزارت ہے اس کے جواب پر صدمہ ہوا ،عدالت کی آبزرویشن

حالیہ ایک مذہبی جماعت کے احتجاج کے دوران وزارت داخلہ کا کلیدی کردار رہا ہے ،عدالت

ایسا ہو ہی نہیں سکتا کہ وزارت داخلہ عدالتی حکم پر عمل درآمد نہ ہوسکے،عدالت

عدالت نے وزارت داخلہ سے کے پی کے کے حراستی مراکز اور گرفتار افراد کی فہرست طلب کرلی

آئندہ سماعت پر سیکریٹری داخلہ رپورٹ پیش نہ کرنے پر سیکریٹری داخلہ ذاتی حثیت میں پیش ہوں عدالت

ایڈووکیٹ جنرل سندھ، ہائی کورٹ میں زیر سماعت لاپتہ افراد کی فہرست تیار کرکہ پیش کریں ،عدالت

عدالت نے آئندہ سماعت پر ایڈووکیٹ جنرل سندھ کو بھی طلب کرلیا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں