90

عمران خان کی کرسی اب جہانگیر ترین کے ہاتھ میں ہے شاھد خاقان عباسی

سابق وزیر اعظم اورپاکستان مسلم لیگ( ن )کے سینئر نائب صدرشاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف پر ان کے اپنے ہی اراکین کو اعتماد نہیں ہے، عمران خان کی کرسی اب جہانگیر ترین کے ہاتھ میں ہے ۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ حکومت نام کی کوئی چیز نہیں، جب تک ملکی نظام آئین کے تحت نہیں چلے گا ملک ترقی نہیں کرسکتا۔شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ حکومت گرانے سے کچھ نہیں ہوتا، جہانگیر ترین پر سیاسی مقدمات بنائے گئے، کوئی بھی تحریک اصولوں کے بغیر نہیں چل سکتی۔ عمران خان کی کرسی اب جہانگیر ترین کے ہاتھ میں ہے، وفاقی حکومت 7 ووٹوں کی برتری سے قائم جبکہ اس سے زائد ارکان ناراض رہنما کے ساتھ ہیں، پنجاب حکومت 8 یا 10 کی برتری سے قائم جبکہ ان کے پاس 30 سے زائد ایم پی ایز ہیں،جہانگیر ترین کے عشائیے میں 40 اراکین اسمبلی نے شرکت کی، ان کے وزیر مشیر کھلم کھلا تنقید کر رہے ہیں، عمران خان اور عثمان بزدار کا اقتدار جے کے ٹی کی ہاں یا ناں پر کھڑا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ فیڈرل بورڈ آف ریونیو(ایف بی آر)کا چھٹا چیئرمین آگیا ہے، جو ادارہ ملک کیلئے پیسے اکھٹے کرتا ہے اس کے سربراہ کی اوسطا عمر 5 ماہ ہے،کسی کو نہیں معلوم ملک کا وزیر خزانہ کون ہے اور کام کون کر رہا ہے۔سابق وزیر اعظم نے کہا کہ ہر روز بجلی، پٹرول کے نرخ بڑھ جاتے ہیں، بجلی کا بل 2 ہزار سے بڑھ کر 5 ہزار پر پہنچ گیا ہے جس کا کوئی جوابدہ نہیں، وزیراعظم نے کبھی عام آدمی کے مسائل کی بات نہیں کی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں