130

شہباز گل کا بڑا فیصلہ حملہ آوروں کو معاف کردیا

وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی ڈاکٹر شہباز گل مے ان پر سیاہی پھینکنے والے لیگی کارکنوں کو معاف کردیا اور پولیس کو انہیں چھوڑنے کی ہدایت کی ہے اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ ‏کل عدالت میں لیگی قیادت کی ایماء پرمجھ پرحملہ کیا گیا. اخلاق سے گرے لوگ غریب دیہاڑی دار افراد خصوصاً خواتین کا استعمال کر رہے ہیں۔میں حملہ کرنے والوں کو معاف کرتا ہوں-میں کسی غریب اور نا سمجھ کو جیل میں نہیں دیکھنا چاہتا۔پولیس سے گذارش ہے کہ ان کے ساتھ کوئی برا سلوک نہ کیا جائے
مسلم لیگ( ن )کے کارکنوں کی جانب سے پھینکی گئی سیاہی سے وزیر اعظم عمران خان کے معاون خصوصی ڈاکٹر شہباز گل کی بائیں آنکھ متاثر ہوگئی۔معاون خصوصی ڈاکٹر شہباز گل کا لاہور کے میو اسپتال میں چیک اپ کیا گیا۔ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ سیاہی میں موجود کیمیکل نے شہباز گل کی آنکھ میں انفیکشن کردیا۔ڈاکٹرز نے شہباز گل کی بائیں آنکھ پر ٹریٹمنٹ کے بعد پٹی لگادی
وزیراعظم کے معاون خصوصی رہنما پی ٹی آئی شہبازگل کی لاہور ہائی کورٹ آمد پر لیگی کارکنوں نے ان پر انڈے برسا دیئے اور سیاہی پھینک دی ۔  وزیراعظم کے معاون خصوصی اور تحریک انصاف کے رہنما شہبازگل لاہور ہائی کورٹ پہنچے تو پہلے سے موجود مسلم لیگ(ن) کے کارکنان نے انہیں انڈے دے مارے جبکہ کارکنان نے ان پر سیاہی بھی پھینکی، سیاہی شہباز گل کے کپڑے اور ہاتھ سیاہی سے آلودہ ہوگئے۔ وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے سیاسی روابط شہباز گل پر انڈے اور سیاہی پھینکنے والی خاتون سمیت (ن) لیگی کارکنان کوپولیس نے گرفتار کر لیا۔شہباز گل نے میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے کہا کہ وہ وزیراعظم عمران خان کے جانثار ہیں، بوکھلائی ہوئی اپوزیشن اوچھے ہتھکنڈوں پر اتر آئی ہے۔ گالی کے جواب میں گالی نہیں دیں گے، تشدد کے جواب میں مخالفین کی تربیت کریں گے، اپوزیشن جو بھی کر لے اپنے موقف سے پیچھے نہیں ہٹیں گے۔ انہوں نے کہا کہ مجھے عدالت بلائے گی تو ضرور آئوں گا، آپ کی طرح بہانے نہیں بنائوں گا، عدالتیں جب ان کو بلاتی ہیں تو ان کی کمر میں درد شروع ہو جاتا ہے۔انہوں نے کہا کہ عدالت میں ایف آئی اے کی مصدقہ دستاویزات دیں، مصدقہ دستاویزات کی بنیاد پر میں نے مقدمہ درج کرایا، قانون اور عدالتوں کا ہر صورت احترام کریں گے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں