15

ایڈیشل سیشن جج نے سکاؤٹس ہیڈکوارٹرز دفتر پرحملہ کرنے، ملازمین کو زدوکوب غوا کرنےکے جرم میں ملزمان کی ضمانت خارج کردی پولیس نے 3 افرادکوگرفتارکرلیا،

آج ایڈیشل سیشن جج فرخ فرید بلوچ صاحب نے نیشنل سکاؤٹس ہیڈ کوارٹرز اسلام آباد کے دفتر پر وحشیانہ حملہ کرنے، ملازمین کو زد و کوب اور اغوا کرنے کے جرم میں مرکزی ملزمان زاہد محبوب، شمش خان اور افضل بابر کی ضمانت خارج کردی۔ موقع پر موجود اسلام آباد پولیس نے تینوں مجرموں کو گرفتار کرلیا، اور آبپارہ تھانہ کی حوالات میں بند کردیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق، 5 نومبر کی رات کو مجرمان نے اسکاؤٹ ہیڈکوارٹر اسلام آباد پر مسلح ساتھیوں کے ساتھ قبضہ کرنے کی کوشش کی، تین ملازمین کو اغوا کرلیا ، اور باقی ملازمین کو زدو کوب کیا ، موقع پر پولیس پہچ گئی، اور چیف کمشنر بوائے اسکاؤٹ سرفراز قمر ڈاہا کی مدعیت میں مقدمہ نمبر 898/2022 آبپارہ پولیس تھانہ میں درج کیا گیا ، اور موقع پر موجود چار مجرموں کو گرفتار بھی کیا گیا تھا ، اور باقی لوگ پولیس آنے پر بھاگ گئے تھے ، اور آج تین مجرموں کو گرفتار کرلیا گیا ہے، چیف کمشنر سرفراز قمر ڈاہا نے اس موقع پر میڈیا نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ہماری اسکاؤٹ تنظیم امن کی پیامبر ہے، اور ہم نوجوان نسل کو سچ بولنے، آپس میں ہم آہنگی ، بھائی چارہ کے فروغ اور ان کے کردار سازی کے لیے کام کرتے ہیں ، یہ پہلی دفعہ ہوا ہے کہ ہماری اسکاؤٹ تنظیم پر اس طرح کے حملے کئے جارہے ہیں، اور یہ سب کچھ وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں ہو رہا ہے۔ انہوں نے اسلام آباد انتظامیہ اور پولیس سے درخواست کی ہے کہ ان عناصر کے خلاف سخت کارروائی کی جائے ، اور اسکاؤٹ ہیڈکوارٹر کی حفاظت کے لیے فی الفور انتظام کیا جائے، تاکہ یہاں ملازمین اور اسکاؤٹس بلا خوف کام کرسکے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں