42

ہانگ کانگ ۔ مین لینڈ کے درمیان تجارت میں 25 برس کے دوران 6 گنا سے زائد اضافہ بیجنگ (شِںہوا) ہانگ کانگ کی 25 برس قبل مادروطن کو واپسی کے بعد سے ہانگ کانگ خصوصی انتظامی خطے اور چینی مین لینڈ کے درمیان تجارت میں 6 گنا سے زائد اضافہ ہوا ہے۔ وزارت تجارت کے اعدادوشمار کے مطابق 1997 سے 2021 تک خصوصی انتظامی خطے (ایس اے آر) اور مین لینڈ کے درمیان تجارتی مالیت 50.77 ارب امریکی ڈالرز سے 6.1 گنا بڑھ کر 360.33ارب امریکی ڈالرز ہوگئی، جو اوسطاً 8.5 فیصد سالانہ اضافہ ہے۔ اعداد و شمار کے مطابق 2021 کے اختتام تک ہانگ کانگ سے مین لینڈ میں کی جانے والی سرمایہ کاری 14 کھرب امریکی ڈالرز سے زائد تھی۔ وزارت تجارت کے ترجمان شو جو تھنگ نے پریس بریفنگ میں بتایا کہ 1997 سے مین لینڈ اور ہانگ کانگ کے درمیان اقتصادی اور تجارتی تعاون مسلسل وسیع ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ملک کی مجموعی ترقی کے ساتھ خود کو مربوط کرتے ہوئے ہانگ کانگ مقامی سرکولیشن میں ایک اہم حصہ دار اور مقامی و بین الاقوامی سرکولیشن کو جوڑنے میں کلیدی شراکت دار بن چکا ہے۔ گزشتہ 25 برس میں وزارت تجارت نے خصوصی انتظامی خطے کی حکومت کے ساتھ اقتصادی اورتجارتی تعاون کے طریقہ کار پر کام کیا ، گوانگ  ڈونگ ۔ ہانگ کانگ ۔ مکاؤ گریٹر بے ایریا کی تعمیر میں سہولت فراہم کی اور بیلٹ اینڈ روڈ انیشی ایٹو میں ہانگ کانگ کو شریک کرنے کی حمایت کی۔ شو نے کہا کہ مین لینڈ اور ہانگ کانگ میں قریبی اقتصادی شراکت داری انتظام اور متعلقہ معاہدوں پر دستخط سے مین لینڈ اور ہانگ کانگ کے درمیان اشیاء کی تجارت کو آزاد بنانے کا مکمل حصول ممکن ہوا ،اور خدمات کی تجارت کو آزاد بنانے کا بنیادی مقصد حاصل کیا گیا۔ مستقبل پر نگاہ ڈالتے ہوئے شو نے کہا کہ وزارت تجارت ہانگ کانگ کی اقتصادی ترقی اور اس کے رہائشیوں کی فلاح و بہبود بہتر بنانے کے ساتھ خطے کو مجموعی قومی ترقی سے مربوط کرنے کی حمایت جاری رکھے گی۔ صدر شی کا ہانگ کانگ کے نوجوانوں کی ترقی و نکھار کے مزید مواقع پید کرنے پر زور ہانگ کانگ (شِنہوا) چین کے صدر شی جن پھنگ نے ہانگ کانگ میں نوجوانوں کو مشکلات پر قابو پانے میں مدد دینے اور ان کی ترقی اور نکھار کیلئے زیادہ مواقع پیدا کرنے میں مزید کوششوں پر زور دیا۔ شی نے یہ بات ہانگ کانگ کی مادروطن واپسی کی 25 ویں سالگرہ اور ہانگ کانگ خصوصی انتظامی خطے کی چھٹی مدتی حکومت کے آغاز کے موقع پر جمعہ کے روز ہونےوالے تقریب میں کہی۔ شی نے ہانگ کانگ کے نوجوانوں کو ملک و دنیا دونوں میں بنیادی رجحان کی گہری تعریف حاصل کرنے اور ان کے قومی فخر کے احساس کو بڑھانے میں مدد دینے کی کوششوں پر زور دیا۔ انہوں نے ہانگ کانگ کے نوجوانوں کو تعلیم، روزگار، کاروباری اسٹارٹ اپ اور گھر خریدنے میں مشکلات پر قابو پانے اور ان کے لئے مزید مواقع پیدا کرنے میں مدد دینے کی ضرورت پر بھی زور دیا۔ شی نے کہا کہ ” جب نوجوان پھلتا پھولتا ہے تو ہانگ کانگ پھلتا پھولتا ہے جب نوجوان ترقی کرتے  ہیں تو ہانگ کانگ ترقی کرتا ہے، نوجوانوں کے مستقبل کے ساتھ ہانگ کانگ کا مستقبل ہے۔ اگلے پانچ سال ہانگ کانگ کی ترقی کے نئے سفرکے لیے اہم ترین ہیں صدر شی ہانگ کانگ(شِنہوا)صدرشی جن پھنگ نے کہا ہے کہ ہانگ کانگ کے لیے اگلے پانچ سال نئے اور اچھوتے کارنامے سرانجام دینےاورترقی کا نیا سفرشروع کرنے کے لیے اہم ترین ہوں گے۔ صدر شی نے ان خیالات کا اظہارجمعہ کو یہاں  ہانگ کانگ کی مادر وطن واپسی کی 25 ویں سالگرہ اور ہانگ کانگ خصوصی انتظامی علاقے کی چھٹی مدت کی حکومت کی افتتاحی تقریب کے موقع پر منعقدہ اجلاس میں کیا۔ چینی صدر نے کہا کہ ہانگ کانگ افراتفری سے نظم و نسق اورعظیم تر خوشحالی کی جانب منتقلی کے ایک نئے مرحلے میں ہے۔ انہوں نے  کہا کہ ہانگ کانگ کو مواقع اور چیلنجز دونوں کا سامنا ہے، لیکن چیلنجزکی نسبت مواقع کی تعداد زیادہ ہے۔ امید ہے ہانگ کانگ کے عوام ہم آہنگی اور استحکام کو برقرار رکھیں گےچینی صدر ہانگ کانگ(شِنہوا) چین کے صدر شی جن پھنگ نے امید ظاہر کی ہے کہ ہانگ کانگ کے تمام لوگ بہتر زندگی کے حصول کے لیے مشترکہ طور پر ہم آہنگی اور استحکام کو برقرار رکھیں گے۔ صدر شی نے ان خیالات کا اظہار ہانگ کانگ کی مادر وطن واپسی کی 25 ویں سالگرہ اور ہانگ کانگ خصوصی انتظامی علاقے کی چھٹی مدت کی حکومت کی جمعہ کو ہونے والی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ صدر شی نے کہا کہ نشیب وفراز سے گزرنے کے بعد، لوگوں نے تکلیف دہ تجربے سے یہ سیکھ لیا ہے  کہ ہانگ کانگ کو غیر مستحکم نہیں ہونا چاہیے اور وہ کسی افراتفری کا متحمل نہیں ہو سکتا۔ انہوں نے کہا کہ ہانگ کانگ کی ترقی کے لیے کوئی وقت ضائع کیے بغیر ہر قسم کی رکاوٹوں کو دور کیا جانا چاہیے تاکہ ہانگ کانگ ترقی پر توجہ مرکوز رکھ سکے۔ چینی صدر نے ہانگ کانگ کے ہم وطنوں پر زور دیا کہ وہ مرکزی دھارے کی اقدارکو بھرپور طریقے سے فروغ دیں جو مادر وطن سے محبت اور ہانگ کانگ کی محبت پر مرکوز اور “ایک ملک، دو نظام” کے مطابق ہیں۔ صدر شی نے کہا کہ ہانگ کانگ کے ہم وطنوں کو  جامعیت، یکجہتی اور یکسانیت کے بغیر مشترکہ بنیاد اور استقامت کی عمدہ روایت کو آگے بڑھانا چاہیے اورپرعزم طور پر مسائل کو حل کرتے ہوئے ایک بہتر زندگی بنانے کے لیے مل کر کام کرنا چاہیے۔ ہانگ کانگ اپنی ترقی کی رفتارکومضبوط کرنے کا سلسلہ جاری رکھےچینی صدر ہانگ کانگ(شِنہوا)صدرشی جن پھنگ نے اس امیدکااظہار کیا ہے کہ ہانگ کانگ  اپنی ترقی کی رفتارمیں استحکام کوجاری رکھے گا۔ صدر شی نے ان خیالات کا اظہار ہانگ کانگ کی مادر وطن واپسی کی 25 ویں سالگرہ اور ہانگ کانگ خصوصی انتظامی خطے کی چھٹی مدت کی حکومت کی جمعہ کو ہونے والی افتتاحی تقریب کے موقع پر منعقدہ اجلاس میں کیا۔  چینی صدر نے کہا کہ مرکزی حکومت قومی ترقی کی حکمت عملی کے ساتھ ہم آہنگی،دنیا کے ساتھ زیادہ وسیع اور قریبی تبادلوں اور تعاون کو فروغ دینے، فعال اور دانشمند انداز میں اصلاحات کو آگے بڑھانے اور معاشرے کی تخلیقی صلاحیتوں اور ترقی کی قوت کو مکمل طور پراجاگر کرنے میں ہانگ کانگ کی مکمل حمایت کرتی ہے۔ ہانگ کانگ اپنی ترقی کی رفتارکومضبوط کرنے کا سلسلہ جاری رکھےچینی صدر ہانگ کانگ(شِنہوا)صدرشی جن پھنگ نے اس امیدکااظہار کیا ہے کہ ہانگ کانگ  اپنی ترقی کی رفتارمیں استحکام کوجاری رکھے گا۔ صدر شی نے ان خیالات کا اظہار ہانگ کانگ کی مادر وطن واپسی کی 25 ویں سالگرہ اور ہانگ کانگ خصوصی انتظامی خطے کی چھٹی مدت کی حکومت کی جمعہ کو ہونے والی افتتاحی تقریب کے موقع پر منعقدہ اجلاس میں کیا۔  چینی صدر نے کہا کہ مرکزی حکومت قومی ترقی کی حکمت عملی کے ساتھ ہم آہنگی،دنیا کے ساتھ زیادہ وسیع اور قریبی تبادلوں اور تعاون کو فروغ دینے، فعال اور دانشمند انداز میں اصلاحات کو آگے بڑھانے اور معاشرے کی تخلیقی صلاحیتوں اور ترقی کی قوت کو مکمل طور پراجاگر کرنے میں ہانگ کانگ کی مکمل حمایت کرتی ہے۔

ایک ملک، دو نظام کو طویل عرصے تک برقرار رکھا جانا چاہیے،چینی صدر
ہانگ کانگ(شِنہوا)چین کے صدر شی جن پھنگ نےکہا ہے کہ “ایک ملک، دو نظام” بار بار کی آزمائش میں درست ثابت ہوا ہے۔ انکا کہنا تھا کہ اس طرح کے اچھے نظام کو تبدیل کرنے کی کوئی وجہ نہیں ہے ،اور اسے طویل عرصے تک برقرار رہنا چاہیے۔
 جمعہ کو شی نے ہانگ کانگ کی مادر وطن واپسی کی 25 ویں سالگرہ اور ہانگ کانگ  خصوصی انتظامی علاقے کی چھٹی مدت کی حکومت کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئےکہا  “ایک ملک، دو نظام” کی پالیسی ایک عظیم اقدام ہے جس کی کوئی نظیر نہیں ملتی،اور اس کا بنیادی مقصد چین کی قومی خودمختاری، سلامتی اور ترقیاتی مفادات کو برقرار رکھنا اور ہانگ کانگ اور مکاؤ میں طویل مدتی خوشحالی اور استحکام کو برقرار رکھنا ہے۔
شی نے کہا کہ مرکزی حکومت نے جو کچھ کیا ہے وہ ہمارے ملک، ہانگ کانگ اور مکاؤ میں ہمارے ہم وطنوں کے فائدے کے لیے ہے۔  شی نے کہا کہ “ایک ملک، دو نظام” کو بار بار آزمایا اور ثابت کیا گیا ہے، یہ ملک اور چینی قوم اور ہانگ کانگ اور مکاؤ کے بنیادی مفادات کو پورا کرتا ہے۔  انہوں نے مزید کہا کہ اسے مادر وطن کے 1 ارب40کروڑ سے زیادہ لوگوں کی مکمل حمایت حاصل ہے، اسے ہانگ کانگ اور مکاؤ کے باشندوں کی متفقہ توثیق حاصل ہے، اور اسے بین الاقوامی برادری نے بڑے پیمانے پر تسلیم کیا ہے۔
شی نے کہا، “اس طرح کے اچھے نظام کو تبدیل کرنے کی کوئی وجہ نہیں ہے، اور اسے طویل عرصے تک برقرار رہنا چاہیے۔”

صدر شی کا ہانگ کانگ خصوصی انتظامی خطے کی حکمرانی بہتر بنانے کی اہمیت پر زور
ہانگ کانگ (شِنہوا) چین کے صدر شی جن پھنگ نے کہا ہے کہ حکمرانی کے نظام و صلاحیت میں اضافہ اور اس کی افادیت کا فروغ ہانگ کانگ خصوصی انتظامی خطے میں ترقی کےلئے نہایت اہم ہے
شی نے یہ بات ہانگ کانگ کی مادروطن واپسی کی 25 ویں سالگرہ اور ہانگ کانگ خصوصی انتظامی خطے کی چھٹی مدتی حکومت کے آغاز کے موقع پر ہونےوالے تقریب میں کہی۔
شی نے کہا کہ ہانگ کانگ خصوصی انتظامی خطے کے چیف ایگزیکٹو اور ہانگ کانگ خصوصی انتظامی خطے کی حکومت کو اپنے حلف کی مکمل پاسداری کرنا چاہئے اور “ایک ملک، دو نظام” کی پالیسی پرعملدرآمد، بنیادی قانون کے اختیار کو برقرار رکھنا اور خود کو ہانگ کانگ خصوصی انتظامی خطے کےلئے وقف کرنے کے لئے ٹھوس اقدامات کرنا چاہئے۔

صدر شی کاہانگ کانگ کا انتظام کرنے والے محب وطن اصول کے نفاذ پرزور
ہانگ کانگ(شِنہوا)صدر شی جن پھنگ نے  “ہانگ کانگ کا انتظام کرنے والے محب وطن” کے اصول کے نفاذ پر زور دیا ہے۔  جمعہ کوشی نے ہانگ کانگ کی مادر وطن واپسی کی 25ویں سالگرہ کے موقع پر منعقدہ اجلاس اور ہانگ کانگ خصوصی انتظامی علاقے کی چھٹی مدت کی حکومت کی افتتاحی تقریب سے خطاب میں کہاکہ ہانگ کانگ خصوصی انتظامی علاقے کے انتظام کے اختیارات کو محب وطن لوگوں کے ہاتھ میں رکھنا ہانگ کانگ کے طویل مدتی استحکام اور سلامتی کے تحفظ کے لیے ضروری ہے۔
شی نے کہا، “کسی بھی وقت اس اصول پر سمجھوتہ کرنے کی اجازت نہیں دی جانی چاہیے۔” 
شی نے مزید کہا کہ نظم و نسق کی طاقت کا تحفظ ہانگ کانگ کی خوشحالی اور استحکام کے ساتھ ساتھ ہانگ کانگ کے 70لاکھ سے زیادہ باشندوں کے مفادات کا تحفظ ہے۔

صدرشی کی ہانگ کانگ کے باشندوں کو تہہ دل سے مبارکباد
ہانگ کانگ(شِنہوا) صدر شی جن پھنگ نے ہانگ کانگ کی مادر وطن واپسی کی 25 ویں سالگرہ اور ہانگ کانگ خصوصی انتظامی علاقے(ایچ کے ایس اےآر) کی چھٹی مدت کی حکومت کی افتتاحی تقریب کے موقع پر منعقدہ اجلاس میں ہانگ کانگ کے تمام باشندوں کو مبارکباد پیش کی ہے۔
 کمیونسٹ پارٹی آف چائنہ کی مرکزی کمیٹی کے جنرل سیکرٹری اور مرکزی فوجی کمیشن کے چیئرمین شی نےایچ کے ایس اےآر کے نئے حلف اٹھانےوالے چھٹی مدت کے چیف ایگزیکٹوجان لی،چھٹی مدت کے ایچ کے ایس اےآر حکومت کے اہم عہدیداروں اور ایگزیکٹو کونسل کے اراکین کودل کی گہرائیوں سے مبارکباد پیش کی۔
شی نے کہا، “میں اندرون اور بیرون ملک مقیم تمام چینی ہم وطنوں اور غیر ملکی دوستوں کی ‘ایک ملک، دو نظام’ اور ہانگ کانگ کی خوشحالی اور استحکام کے مقصد کے لیے ان کی حمایت پر دلی تحسین کا اظہار کرتا ہوں۔”

مرکزی حکومت ہانگ کانگ کی منفرد حیثیت کو برقرار رکھنے میں مکمل تعاون کرتی ہے،صدر شی
ہانگ کانگ(شِنہوا)چینی صدر شی جن پھنگ نے کہا ہے کہ مرکزی حکومت طویل مدتی بنیادوں پر ہانگ کانگ کی منفرد حیثیت کو برقرار رکھنے میں مکمل حمایت کرتی ہے۔ جمعہ کوشی نے ہانگ کانگ کی مادر وطن واپسی کی 25 ویں سالگرہ اور ہانگ کانگ خصوصی انتظامی علاقے کی چھٹی مدت کی حکومت کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا  “ہانگ کانگ کے بنیادی مفادات ملک کے بنیادی مفادات سے ہم آہنگ ہیں، اور مرکزی حکومت کا دل اور ہانگ کانگ کے ہمارے ہم وطنوں کا دل ہمیشہ ایک ساتھ دھڑکتا ہے۔”
شی نے کہا کہ مرکزی حکومت ہانگ کانگ کو ایک بین الاقوامی مالیاتی، جہاز رانی اور تجارتی مرکز کے طور پر اپنے کردار کو مستحکم کرنے، اس کے آزاد، کھلے اور مستحکم کاروباری ماحول کو برقرار رکھنے، اس کے مشترکہ قانون کے نظام کو برقرار رکھنے اور باقی دنیا کے ساتھ ہموار اور آسان روابط کو بڑھانے میں مکمل حمایت کرتی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں