43

سپریم کورٹ ایف آئی اے نے اعلیٰ شخصیات کے مقدمات میں مبینہ مداخلت کیس میں جواب جمع کرا دیا

سپریم کورٹ

ایف آئی اے نے اعلیٰ شخصیات کے مقدمات میں مبینہ مداخلت کیس میں جواب جمع کرا دیا

وزارت داخلہ سمیت کسی ادارے نے ایف آئی اے تحقیقات میں مداخلت نہیں کی،رپورٹ

ایف آئی کی درخواست پر فاروق باجوہ کو پراسیکوٹر تعینات کیا گیا، رپورٹ

ایف آئی اے حکومت، عدالتوں اور تحقیقاتی اداروں کی سفارشات پر ای سی ایل میں نام ڈالتی ہے، رپورٹ

حکومت کی جانب سے حال ہی میں ای سی ایل رولز میں ترمیم کی گئی، رپورٹ

کچھ شخصیات کے نام تحقیقات مکمل نہ ہونے کے باوجود گزشتہ7-8 سال سے ای سی ایل میں تھے، رپورٹ

ترمیم شدہ رولز کے مطابق ہی نام ای سی ایل سے نکالے گئے، رپورٹ

عدالتی حکم ،دہشتگردی ، سنگین جرائم اور قومی سلامتی کے ملزمان کے نام سی ایل سے نہیں نکالے گئے، رپورٹ

منشیات کے مقدمات بڑے پیمانے پر عوام کو لوٹنے والوں کے نام ای سی ایل سے نہیں نکالے گئے، رپورٹ

ایف آئی اے نے رپورٹ کے ہمراہ ای سی ایل سے نام نکالنے کی فہرست بھی عدالت میں جمع کروادی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں