54

جامعہ کشمیر مظفرآباد مقتدر ادارے کی ایماء پر سربراہ شعبہ انگریزی کو عہدے سے فارغ کر دیا گیا۔ ڈاکٹر شاہدہ خلیق کرنل کی بیوی کی مائیگریشن غیر قانونی طریقے سے نہ کرنے پر عہدے سے ہٹائی گئیں۔

کرنل کی بئوی جامعہ کشمیر مظفرآباد
مقتدر ادارے کی ایماء پر سربراہ شعبہ انگریزی کو عہدے سے فارغ کر دیا گیا۔
ڈاکٹر شاہدہ خلیق جو کہ شعبہ انگریزی کے سربراہ کے طور پر کام کر رہی تھی کرنل کی بیوی کی مائیگریشن غیر قانونی طریقے سے نہ کرنے پر عہدے سے ہٹائی گئیں۔
با وثوق ذرائع سے پتہ چلا کہ اپنا تعارف کرنل کی بیوی کے طور پر کروانے والی طالبہ ڈاکٹرعائشہ سہیل کے ریفرنس سے مائگریشن کے لیے شعبہ انگریزی میں آہئ رجسٹرار ڈاکٹر عائشہ سہیل نے ڈاکٹر شاہدہ کو مائیگریشن پراسیس کے بغیر مذکورہ طالبہ کو کلاسسز میں بٹھانے کے لیے کہا جس پر ڈاکٹر شاہدہ کا کہنا تھا کہ مایگریشںن کا طریقہ کار مکمل ھونے اور این او سی جاری ہونے پر کلاس میں بٹھایا جائے گا۔
جس پر قائمقام وائس چانسلر (رجسٹرار ڈاکٹر عائشہ سہیل) نے ڈاکٹر شاہدہ کو ان کے عہدے سے فارغ کروا دیا۔ اور اس کے اگلے ہی روز مبینہ کرنل کی بیوی کا داخلہ ہو گیا۔
ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ جلد ازجلد ڈاکٹر شاہدہ کو اپنے عہدے پر بحال کیا جائے۔
بتایا جائے کہ کیا فوج کے کہنے پر سربراہان تبدیل کیے جائیں گے؟
کیا سمسٹر ختم ہونے سے دو ہفتے قبل جامعہ میں داخلے کی کوئی مثال موجود ہے؟
طلباء کے سامنے اس معاملے کی مکمل تفصیلات رکھی جائیں ورنہ حالات کی ذمہ دار ڈاکٹر عائشہ سہیل ہونگی

جامعہ کشمیر

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں