47

پاک فوج کو سیاست میں نہ گھسٹیں اس کا کسی قسم سے سیاست سے کوئی تعلق نہیں فوجی ترجمان کا مریم نواز کے بیان پر 4 دن بعد ردعمل

 مسلم لیگ نون کی مرکزی نائب صدر محترمہ مریم نواز نے کہا کہ جب وزیراعظم عمران خان اپوزیشن کو قابو کرنے میں ناکام ہوجاتے ہیں تو اپنے بڑوں سے کہتے ہیں کہ اپوزیشن کو قابو میں لائیں تو مقتدر اداروں کے بڑے مسلم لیگ نون کے ارکان کو فون کرتے ہیں کہ خدا کے لئے قومی اسمبلی اور سینیٹ میں ترامیم کی منظوری میں عمران خان کا ساتھ دیں  لیکن 4 روز بعد  پاک فوج کے ترجمان ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل بابر افتخار نے مریم نواز کے مظفرآباد میں پاک فوج پر لگائے جانے والے الزامات کو مسترد کرتے ہوئے ایسی کال کا ثبوت پیش کرنے کا چیلنج دیا انہوں نے سختی سے کہا کہ ایسی  کوئی بات نہیں انہوں نے   کہا کہ “پاک فوج کو سیاست میں نہ گھسٹیں اس کا کسی قسم سے سیاست سے کوئی تعلق نہیں  ہمارے کسی سے بیک ڈور رابطے نہیں ہیں انہوں نے کہا کہ وہ ایک مرتبہ  قیاس آرائیاں کرنے والوں سے پھر کہیں گے کہ فوج کو سیاست میں نہ گھسٹیں انہوں نے کہا کہ کہا کہ ملک کی داخلہ اور خارجہ سیکورٹی کا بڑا فریضہ ہے جسے فوج احسن طریقے سے انجام دے رہی ہے بغیر تحقیق اور شواھد کے کسی کو سوٹ نہیں کرتا لہذا ایسی قیاس آرائیاں کو بند ہونا چاہیے انہوں نے کہا کہ اس قسم کی قیاس آرائیاں کرنے والوں کے پاس کوئی ثبوت ہے تو وہ سامنے لائے دکھا دیں کون کس کو کال کررہا ہے کس سے بات کررہا ہے انہوں نے واضح کیا ایسی کوئی بات نہیں ہے ” 

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں