93

وفاقی وزیر کھل عام الیکشن مہم چلارہا ہے، جلسے کررہا ہے،الیکشن کمیشن کہاں ہے؟ ایمل ولی خان

پی کے 63ضمنی انتخاب،وفاقی وزیر انتخابی مہم چلارہا ہے، اے این پی کا الیکشن کمیشن سے نوٹس لینے کا مطالبہ
ایک وفاقی وزیر کھل عام الیکشن مہم چلارہا ہے، جلسے کررہا ہے،الیکشن کمیشن کہاں ہے؟ ایمل ولی خان
وفاقی وزیردفاع پرویزخٹک نوشہرہ میں جلسوں سے خطاب کررہا ہے، سرکاری مشینری استعمال کی جارہی ہے
بطور وزیراعلیٰ انہوں نے صوبے کا بیڑا غرق کردیا، اب نوشہرہ کے عوام کو لالی پاپ دینے کی کوشش کررہے ہیں
پیسوں سے اب نوشہرہ کے عوام کے ضمیر خریدے نہیں جاسکتے، عوام انکی اصلیت جان چکی ہے
الیکشن کمیشن نے نوٹس نہیں لیا تو ہم دیگر آپشنز بھی غور کررہے ہیں
19فروری ایک نئے صبح کا آغاز ہوگا، عوامی نیشنل پارٹی عوام کی جماعت ہے اور عوام کے درمیان ہی رہے گی
عوام موجودہ حکومت سے تنگ آچکے، پی کے 63ضمنی انتخاب جیت کر دکھائیں گے، ایمل ولی خان
لالٹین تعلیم، امن،ترقی اور روشنی کی علامت ہے، 19فروری موجودہ حکومت کی شکست کا دن ہوگا
عوام لالٹین کے حق میں ووٹ ڈال کر اس نالائق حکومت کے خلاف طبل جنگ بجائیں گے
نااہل حکمرانوں کے پاس پروپیگنڈوں، جھوٹ، الزامات اور انتقام کے علاوہ عوام کیلئے کچھ نہیں
مسلط حکومت سے چھٹکارا حاصل کرنے کیلئے نوشہرہ ضمنی انتخابات میں عوام کو نکلنا ہوگا
یہ نالائق حکمران اس ملک پر مسلط رہیں تو مہنگائی کا طوفان جو سر چڑھ کر بول رہا ہے، مزید تیز ہوگا
باچاخان مرکز پشاور میں پی کے 63ضمنی انتخاب کی تیاریوں کے جائزہ اجلاس سے خطاب
پشاور(پ ر) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر ایمل ولی خان نے الیکشن کمیشن آف پاکستان سے مطالبہ کیا ہے کہ پی کے 63ضمنی انتخابات میں وفاقی وزیردفاع پرویزخٹک کی جانب سے انتخابی مہم اور سرکاری مشینری کے استعمال کا نوٹس لیں۔ کیا الیکشن کمیشن کو یہ سب کچھ نظر نہیں آرہا؟ باچاخان مرکز پشاور میں پی کے 63ضمنی انتخابات کے سلسلے میں منعقدہ جائزہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ایمل ولی خان نے کہا کہ ایک وفاقی وزیر کھل عام الیکشن مہم چلارہا ہے، جلسوں کا انعقاد کیا جارہا ہے لیکن الیکشن کمیشن ٹھس سے مس نہیں ہورہی۔ وفاقی وزیردفاع پرویزخٹک نوشہرہ میں جلسوں سے خطاب کررہا ہے، سرکاری مشینری کا استعمال کرکے مختلف منصوبوں کے اعلانات کررہا ہے اور ضمنی انتخابات پر مکمل اثرانداز ہورہا ہے ۔ بطور وزیراعلیٰ انہوں نے صوبے کا بیڑا غرق کردیا، اب نوشہرہ کے عوام کو لالی پاپ دینے کی کوششوں میں لگے ہوئے ہیں۔ ایمل ولی خان نے کہا کہ پیسوں سے اب نوشہرہ کے عوام کے ضمیر خریدے نہیں جاسکتے ، عوام ان مسلط اور نااہل حکمرانوں کی اصلیت جان چکی ہے۔ الیکشن کمیشن نے نوٹس نہیں لیا تو ہم دیگر آپشنز پر بھی غور کررہے ہیں اور انکے خلاف ہر آپشن استعمال کرنے کا حق محفوظ رکھتے ہیں۔ 19فروری خیبرپختونخوا میں ایک نئے صبح کا آغاز ہوگا، عوامی نیشنل پارٹی عوام کی جماعت ہے اور عوام کے درمیان ہی رہے گی۔ ایمل ولی خان نے کہا کہ عوام موجودہ حکومت سے تنگ آچکے ہیں، پی کے 63ضمنی انتخابات میں عوام لالٹین کے حق میں ووٹ ڈال کر اس نالائق حکومت کے خلاف طبل جنگ بجائیں گے کیونکہ لالٹین تعلیم، امن، ترقی اور روشنی کی علامت ہے ۔ یہ دن موجودہ حکومت کی شکست کا دن ہوگا۔ انہوں نے مزید کہا کہ نااہل حکمرانوں کے پاس پروپیگنڈوں، جھوٹ، الزامات اور انتقام کے علاوہ کچھ نہیں۔ مسلط حکومت سے چھٹکارا حاصل کرنے کیلئے نوشہرہ ضمنی انتخاب میں عوام کو نکلنا ہوگا اور اس حکومت کا انکا اصل چہرہ دکھانا ہوگا۔ اگر یہ نالائق حکمران اس ملک پر مسلط رہیں تو مہنگائی کا طوفان جو سر چڑھ کر بول رہا ہے، مزید تیز ہوگا اور غریب عوام خودکشیوں پر مجبور ہوجائیں گے۔اجلاس میں اے این پی کے نامزد امیدوار برائے حلقہ پی کے 63انجنیئر میاں وجاہت اللہ، مرکزی و صوبائی کابینہ کے اراکین اور پی کے 63ضمنی انتخاب کیلئے تشکیل کردہ کمیٹیوں کے اراکین سمیت ضلع نوشہرہ ، تحصیل، یونین کونسلز کے عہدیداران اور مشران نے بھی شرکت کی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں