46

سکردو : بین الاقوامی شہرت یافتہ کوہ پیما علی رضا سدپارہ تربیتی مشق کے دوران گیر کر زخمی

بین الاقوامی شہرت یافتہ کوہ پیما علی رضا سدپارہ معمول کی تربیت کے دوران پہاڑ سے گر کر شدید زخمی، ڈاکٹروں کے مطابق علی رضا کی ریڈھ کی ہڈی ٹوٹ چکی ہے، علی رضا کو دنیا کی بلند ترین چوٹیوں کو 17 بار سر کرنے کا اعزاز حاصل ہے

عالمی شہرت یافتہ کوہ پیما علی رضا سدپارہ آج فجر کے وقت معمول کی مشق کے لئے قریبی پہاڑ پر مہم جوئی کر رہے تھے کہ پہاڑ سے پھسل کر کھائی میں گر گئے، حادثے کے بعد انھیں ریجنل ہسپتال سکردو منقیل کیا گیا ہے جہاں آرتھوپیڈک سرجن ڈاکٹر ناصر حسین اور جنرل سرجن ڈاکٹر کامران کے مطابق زخمی کوہ پیما علی رضا سدپارہ کی ریڈھ کی ہڈی اور پسلیاں ٹوٹی ہیں،
ڈاکٹر ناصر کے مطابق اگلے چوبیس گھنٹے کے دوران ان کا آپریشن کیا جائے گا، علی رضا کے بیٹے اور کوہ پیما بشیر حسین نے قوم سے علی رضا سدپارہ کی جلد صحتیابی کے لئے دعا کی اپیل کی ہے
55 سالہ علی رضا سدپار مرحوم علی سدپارہ اور حسن سدپارہ کے استاد تھے اور گلگت بلتستان میں واقع دنیا کی بلند ترین چوٹیوں کو 17 بار سر کرنے کا انھیںں اعزاز حاصل ہے، علی رضا سدپارہ رواں سال کے ٹو کی مہم جوئی پر جا رہے تھے،

سکردو : بین الاقوامی شہرت یافتہ کوہ پیما علی رضا سدپارہ تربیتی مشق کے دوران گیر کر زخمی ، زرائع

سکردو : علی رضا سدپارہ کی ریڑھ کی ہڈی پر گہری چوٹ لگی ہے ، ڈاکٹر ناصر آرتھو پیڈک سرجن

سکردو: آئندہ چوبیس گھنٹے کے دوران آپریشن کریں گے، ڈاکٹر ناصر

سکردو: آپریشن کی کامیابی کے لئے قوم سے دعا کی اپیل، بیٹا بشیر سدپارہ

سکردو : علی رضا سدپارہ صبح قریبی پہاڑی پر معمول کی پریکٹس کے دوران پھسل گئے تھے، زرائع

سکردو : کوہ پیما علی رضا سدپارہ نے 8 ہزار میٹر سے بلند 4 چوٹیوں کو 17 بار سر کر رکھا ہے، زرائع

سکردو: چیف سیکرٹری گلگت بلتستان نے علی رضا سدپارہ کے علاج پر بھرپور توجہ کے لئے ہدایات جاری کر دیں، زرائع

سکردو: علی رضا سدپارہ کے کارناموں پر قوم کو فخر ہے، چیف سیکرٹری گلگت بلتستان

سکردو: علی رضا سدپارہ کے علاج کے لئے ہر ممکن مدد فراہم کی جائے گی، چیف سیکرٹری

سکردو: سیکرٹری صحت گلگت بلتستان علی رضا سدپارہ کے آپریشن اور علاج کی خود نگرانی کریں گے، چیف سیکرٹری

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں