38

سوشل میڈیا پرتوہین آمیز مواد کی نشاندہی کیلئے وزارتِ مذہبی امور کی اپیکس کمیٹی کا اہم اجلاس متنازعہ مواد کے تجزیہ کیلئے موثر لائحہ عمل کی تشکیل، عوامی آگہی اورمتعلقہ اداروں سے مسلسل رابطہ پر اتفاق

(اسلام آباد: 16 جولائی، 2021) سوشل میڈیا پرتوہین آمیز مواد کی نشاندہی کیلئے وفاقی وزارتِ مذہبی امور کی اپیکس کمیٹی کا اہم اجلاس گذشتہ دن وزارت کے کمیٹی روم میں معروف سکالر،علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی کے شعبہ عربی و اسلامیات کے ڈین ڈاکٹر محی الدین ہاشمی کی زیر صدارت منعقد ہوا۔ اجلاس میں متنازع مواد کی نشاندہی اورتجزیہ کیلئے موثر لائحہ عمل کی تشکیل، عوامی آگہی اور متعلقہ اداروں سے مسلسل رابطہ رکھنے پر اتفاق کیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق ویب ایپکس کمیٹی کو پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی (پی ٹی اے) کی جانب سے سوشل میڈیا پر نامناسب، غیر اسلامی اور توہین آمیزمواد کی شکایات کا تجزیہ کرنے اور پی ٹی اے کو اس کے تدارک کیلئے سفارشات مرتب کرنے کی ذمہ دار ی سونپی گئی ہے۔ اس ضمن میں ایپکس کمیٹی کے تیسرے اجلاس میں متعدد متنازعہ ویب سائٹس اور سوشل میڈیا لنکس کا تجزیہ کیا گیا اور پی ٹی اے کے مزید اقدامات کیلئے سفارشات مرتب کی گئیں۔ اجلاس میں یہ بھی فیصلہ کیا گیا کہ سوشل میڈیا پر مقدس ہستیوں کی توہین و تکفیر، دعوت فساد، اختلافی شرعی مسائل ، حساس موضوعات پر مناظروں، اسلامی شعائر ، اقدار اور عقائدکی اہانت پر مبنی مواد کی جانچ پڑتال کیلئے واضح لائحہ عمل کا تعین کیا جائے گا۔ واضح رہے کہ ایپکس کمیٹی اسلامی نظریاتی کونسل کے نمائندے ، مختلف یونیورسٹیوں سے سکالرز، تمام مسالک کے علماء کرام اور وزارتِ مذہبی امور کے نمائدگان پرمشتمل ہے ۔ ایپکس کمیٹی کے سربراہ نے وزارت ِ مذہبی امور کی کارکردگی پر اطمینان کا اظہار کیا اور پی ٹی اے کے ڈائریکٹر ٹیکنیکل کی شرکت اور متنازعہ مواد کی تلفی کے طریقہ کار سے متعلق معاونت کرنے پر شکریہ ادا کیا اور ہدایات جاری کیں کہ آئندہ اجلاس میں ایف آئی اے کے نمائندے کی شرکت بھی یقینی بنائی جائے۔#

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں