31

اسلام آباد میں عثمان مرزا کی ھوس کا شکار لڑکی اور اس کے ساتھ موجود لڑکے سے شادی کرلی

تھانہ گولڑہ کی حدود میں لڑکی اور لڑکے پر تشدد کے حقائق سامنے آگئے
اسلام آباد(وجاہت حسین)تھانہ گولڑہ شریف پولیس نے میگنیم ہائٹس سیکٹر ای الیون ٹو کے فورتھ فلور پر نوجوان اور اس کے ساتھ موجود لڑکی کو حبس بے جا میں رکھنے ، ہراساں کرنے اور برہنہ کرکے تشدد کا نشانہ بنانے والے چار ملزمان کو مرکزی ملزم سمیت گرفتار کرلیا ہے۔ ملزمان کی ویڈیوز گزشتہ روز سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی جس پر آئی جی اسلام آباد قاضی جمیل الرحمان نے وقوعہ کا فوری نوٹس لیتے ہوئے ایس ایس پی آپریشنز کو ملزمان کی گرفتاری کا حکم دیا۔ ایس پی صدر زون کی نگرانی میں پولیس ٹیم نے رات گئے کارروائی کرتے ہوئے وقوعہ میں ملوث مرکری ملزم عثمان مرزا سمیت دیگر ملزمان کو گرفتار کرلیا۔ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرکے مزید تفتیش شروع کر دی گئی ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ یہ واقعہ کم و بیش سات ماہ قبل کا ہے۔ لیکن ویڈیوز اب وائرل ہوئیں۔ موصولہ معلومات کے مطابق اسد نامی متاثرہ نوجوان کا سیکٹر ایف الیون ٹو مین سروس روڈ پر پراپرٹی کا آفس ہے جوکہ پی ڈبلیو ڈی لوہی بھیر کا رہائشی ہے جس نے فلیٹ پر اپنی لاہور کی رہائشی دوست ایمان کو بلایا ہوا تھا۔ اسد کا دوست حافظ عطاء الرحمان سیکٹر ایف الیون ٹو میں پراپرٹی کا کام کرتا ہے۔ یہ واقعہ فلیٹ نمبر 417 فورتھ فلور میں پیش آیا۔ یہ فلیٹ حافظ عطاء الرحمان کے کزن محمد عثمان مرزا نے کرایہ پر لیا ہوا تھا۔متاثرہ نوجوان اسد نے حافظ عطاء الرحمان سے فلیٹ کی چابی لی اور لڑکی کو فلیٹ میں لے گیا۔ کچھ دیر بعد محمد عثمان مرزا، حافظ عطاء، فرحان، محب بنگش اور مدارس بٹ بھی فلیٹ پر پہنچ گئے اور ان سب نے اسد اور اس کی فرینڈ کے ساتھ زیادتی کرتے ہوئے انہیں برہنہ کیا اور ویڈیوز بناتے رہے۔ویڈیوزسوشل میڈیا پر وائرل ہوئیں تو پولیس حرکت میں آگئی اور مقدمہ درج کرکے ملزمان کو گرفتار کرلیا۔ جس میں مرکزی ملزم بھی شامل ہے۔ ملزمان میں آئی ایٹ کا رہائشی محمد عثمان ابرار ۔ خیام ٹاون ایچ تیرہ کاحافظ عطاء الرحمان جس کا ای الیون ٹو میں پراپرٹی آفس ہے۔پنڈوریاں کا رہائشی فرحان شاھین اعوان، شمس آباد راولپنڈی کا رہائشی محب خان بنگش، آئی ٹین ون کا رہائشی عدارس بٹ شامل ہیں ۔
رات گئے پولیس نے چوتھے نامزد ملزم عدارس بٹ کو بھی گرفتار کر لیا۔

اسلام آباد میں لڑکی اور لڑکے پر تشدد کی تحقیقات کا گھیرا مزید تنگ ہو گیا اور واقعے میں ملوث تمام ملزمان کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔

لڑکے لڑکی پر تشدد کے واقعے میں ملوث مرکزی ملزم عثمان مرزا اور اس کے دو ساتھیوں کو پولیس نے گزشتہ روز گرفتار کر لیا تھا جبکہ ‏واقعے ایف آئی آر میں نامزد چوتھے ملزم کو بھی گرفتار کرلیا گیا ہے۔  

پولیس کے مطابق گرفتار ملزم کے موبائل سے ویڈیوز بھی برآمدکی گئی ہیں جبکہ ملزمان کو عدالت میں پیش کر کے جسمانی ریمانڈ بھی حاصل کر لیاگیا ہے۔

اس حوالے سے آئی جی اسلام آباد پولیس قاضی جمیل الرحمان کا کہنا ہے واقعے میں ملوث تمام کرداروں کو سامنے لایا جائےگا۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز سوشل میڈیا پر لڑکی اور لڑکے پر تشدد کی ویڈیو وائرل ہونے کے بعد اسلام آباد پولیس نے ایکشن لیتے ہوئے تشدد کرنے والے بااثر ملزم عثمان مرزا  سمیت 3 افرادکو گرفتار کر لیاتھا۔

اسلام آباد میں عثمان مرزا نامی شخص نے نوجوان لڑکے اور لڑکی کوتشدد کا نشانہ بنایاتھالوگوں نے روکنےکی کوشش کی تو ملزم نے نوجوان لڑکے لڑکی کو مغلظات بکیں اور سنگین نتائج کی دھمکیاں بھی دیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں