54

تحریک انصاف کے اٹک سے MNA میجر طاہر صادق کی صاحبزادی چیئر پرسن ضلع کونسل ایمان طاہر4 نامزد اور 50 نامعلوم افراد کے خلاف ضلع کونسل کے گیٹ پھلانگ کر تالا توڑنے اجلاس منعقد کرنے پر مقدمہ درج

اٹک رکن قومی اسمبلی تحریک انصاف میجر طاہر صادق کی صاحبزادی چیئر پرسن ضلع کونسل اٹک محترمہ ایمان طاہر ، 4 نامزد اور 50 نامعلوم افراد کے خلاف ضلع کونسل اٹک کے گیٹ پھلانگ کر گیٹ کا تالا توڑنے ، ہال کا دروازہ توڑ کر اجلاس منعقد کرنے پر مقدمہ درج ، تفصیلات کے مطابق ڈپٹی کمشنر اٹک علی عنان قمر جو ایڈمنسٹریٹر تحصیل کونسل اٹک بھی ہیں کی ہدایت پر ان کے پی اے عمران شہزاد نے تھانہ اٹک سٹی میں ایف آئی آر درج کرائی کہ وہ ساڑھے 11 بجے دن تحصیل کونسل اٹک میں موجود تھا کہ محترمہ ایمان طاہر ، جمریز خان ، طاہر محمود مودی ، حاجی محمد اکرم خان ، شیخ نثار احمد سمیت 50 نامعلوم افراد تحصیل کونسل اٹک کے گیٹ پر آئے ، گیٹ پھلانگ کر گیٹ کے تالے توڑ دیئے اور ہال کا دروازہ توڑ کر اجلاس منعقد کیا اس پر اے ایس آئی محمد سجاد نے زیر دفعہ 147,149 ت پ کے تحت مقدمہ درج کر لیا گیا ، یاد رہے کہ 29 مارچ کے وقوعہ کا مقدمہ 31 مارچ کو دن پونے 4 بجے درج کیا گیا دریں اثناء اسی تھانہ میں ایک روز قبل چیئرمین بلدیہ اٹک ناصر محمود شیخ سمیت 9 نامزد اور 60 نامعلوم افراد کے خلاف الگ مقدمہ درج کیا گیا اس میں بھی یہی باتیں درج ہیں کہ وہ تالے توڑ کر اندر داخل ہوئے ۔

محترمہ ایمان طاہر کا اپنے خلاف ایف آئی آر درج ہونے کے بعدسوشل میڈیا پر رد عمل

پریس ریلیز: ایمان طاہرصادق : چئیرپرسن ڈسٹرکٹ کونسل اٹک
“اٹک کی جھوٹی اور کرپٹ ترین بیوروکریسی کی جھوٹی ایف آئی آر ہماری سیاسی کامیابیوں و عوامی مقبولیت کا تحریری ثبوت ہے۔

عوام کیلۓ ایسی ایک تو کیا ایک ہزار ایف آئی آرز بھی ہوں تو ہمیں پرواہ نہیں۔ عوام کیلۓ کھڑے ہونا، عوام کے حق کی سچی اور کھری بات کرنا ہی ہماری سیاست ہے۔

تین دن بعد ایف آئی آر کا اندارج انکے ذہنی اور اخلاقی زوال کا عملی ٽبوت ہے۔

بلدیاتی نمائندوں کو سپریم کورٹ نے بحال کیا اور اعلیٰ عدلیہ کے اسی آرڈر کے توسط سے بلدیاتی نمائندے اپنے آفسز میں گئے۔ پبلک آفسز کو عوام کیلۓ نوگو ایریاز بنا کر اور عملے کو جبری گھر بھیج کر بے تکی اور بچپنے کی حرکتیں کرنی والی ضلعی مشینری اور انکے پسِ پردہ حواری منہ کی کھائیں گے۔

انکو اصل مسئلہ ان باتوں سے ہے جو میں نے کل پریس کانفرنس میں کی ہیں۔ اس پر انکی ہوایاں اُڑ رہی ہیں۔ بالکل حواس باختہ ہو چکے ہیں۔

جھوٹے اور بے بنیاد پرچے کاٹ کر انہوں نے نے اپنی کرپشن زدہ، غیر اخلاقی، فسطائی اور غیرجمہوری سوچ کو مزید بے نقاب کیا ہے۔ باقی تمام معاملات جلد عوام کے سامنے رکھیں گے تو عوام خود فیصلہ کر لے گی کہ انکا اصل روپ کیا ہے۔

ہمارا نصب العین اٹک کو کرپشن فری ضلع بنانا ہے اور میں انہیں یقین دلاتی ہوں اسطرح کی حرکات سے انکی کرپشن بچ نہیں سکے گی۔ انشاءاللّہ و تعالیٰ۔”

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں