51

نیب لاہور نے قانون کے مطابق تمام آئینی اقدامات خصوصاً نیب لاہور کی عمارت کی سکیورٹی کو فول پروف بنانے کیلئے لاء انفورنسمنٹ کے اداروں پولیس اور رینجرز کی معاونت حاصل کرنے کا فیصلہ کیا ہے

قومی احتساب بیورو (نیب)، لاہور نے آج میڈیا رپورٹس جن میں 26 مارچ 2021ء کو مریم نواز کی نیب لاہور میں قانون کے مطابق دو (2) انکوائریوں میں پیشی کے موقع پر مبینہ طور پر نیب کے بعض ملزمان، سیاسی جماعتوں کے کارکنوں اور دیگر افراد کی طرف سے نیب لاہور کی عمارت پر چڑھائی کرنے ، پتھرائو کرنے اور نیب کے قانونی اور آئین کے مطابق سرکاری فرائض کی انجام دہی میں مبینہ طور پر رکاوٹ پیدا کرنے اور نیب لاہور کی عمارت کو نقصان پہنچانے کی اطلاعات کی بنیاد پر نیب لاہور نے قانون کے مطابق تمام آئینی اقدامات خصوصاً نیب لاہور کی عمارت کی سکیورٹی کو فول پروف بنانے کیلئے لاء انفورنسمنٹ کے اداروں پولیس اور رینجرز کی معاونت حاصل کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور مبینہ سکیورٹی خدشات کے پیش نظر نیب لاہور کو ریڈ زون (Red Zone) ڈکلیئر کرنے کی متعلقہ حکام سے قانون کے مطابق درخواست کی جا رہی ہے ۔ اس موقع پر نیب نے یہ واضح کیا ہے کہ وہ کسی دھمکی یا دبائو کی پرواہ کئے بغیر ہمیشہ آئین اور قانون کے مطابق ملک سے بد عنوانی کے خاتمہ اور بدعنوان عناصر سے عوام کی اربوں روپے کی لوٹی گئی رقوم کی واپسی کیلئے اپنا کردار ادا کرتا رہے گا ۔ نیب انسداد بد عنوانی کا قومی ادارہ ہے جس کا تعلق کسی سیاسی جماعت، گروہ یا فرد سے نہیں ہے بلکہ صرف اور صرف ریاست پاکستان سے ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں