43

چیئرمین کمیشن نے کیوں اس وقت دلچسپی نہ لی جب ان کا ایک ملازم لاپتہ ہوا؟چیف جسٹس

ایس ای سی پی/ڈیٹا لیک انکوائری کیس
ایس ای سی پی افسر ارسلان ظفر کے خلاف شوکاز نوٹس معطلی حکم میں 10مارچ تک توسیع
اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے حکم امتناع میں توسیع کی
درخواست گزار ارسلان ظفر کی جانب سے سردار تیمور اسلم ایڈووکیٹ عدالت میں پیش
ایس ای سی پی اس کیس میں غیر معمولی دلچسپی کیوں لے رہا ہے؟ چیف جسٹس کا استفسار
چیئرمین کمیشن نے کیوں اس وقت دلچسپی نہ لی جب ان کا ایک ملازم لاپتہ ہوا؟چیف جسٹس
ایسا کام نہ کریں، آپ ایک آزادریگولیٹر ہیں، چیف جسٹس کا وکیل ایس ای سی پی سے مکالمہ
سینئر وکیل سپریم کورٹ سے کچھ دیر میں ہائی کورٹ پہنچ جائیں گے، خاتون ایسو سی ایٹ وکیل
کیس کچھ دیر کے لیے ملتوی کر دیا جائے یا پھر یہ دلائل دیں، میں نوٹ کر لیتی ہوں، ایسوسی ایٹ وکیل
ہم نے آپ کے سامنے ایک سوال رکھا تھا جس کا جواب دینا ہے، چیف جسٹس اطہر من اللہ
سوال یہ تھا کہ ایس ای سی پی اس کیس میں غیر معمولی دلچسپی کیوں لے رہا ہے؟ چیف جسٹس
عدالت نے سماعت میں کچھ دیر کا وقفہ کرنے کی استدعا مسترد کر دی
پہلے بھی کہا تھا کہ آپ اپنے کلائنٹ کو مشورہ دیں،ابھی بھی کہہ رہے ہیں، چیف جسٹس
عدالت نے ایس ای سی پی کے وکیل سے جواب طلب کرتے ہوئے سماعت 10مارچ تک ملتوی کر دی
ایس ای سی پی سے ایک سوال کا جواب مانگا ہے، کیا چیئرمین ایس ای سی پی کو طلب کر لیں؟چیف جسٹس

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں