60

نئے پاکستان میں عام عوام کے ساتھ سرکاری ملازمین کا بھی معاشی قتل عام جاری ہے، ثمر ہارون بلور

نئے پاکستان میں عام عوام کے ساتھ سرکاری ملازمین کا بھی معاشی قتل عام جاری ہے، ثمر ہارون بلور
خیبر پختونخوا کو تباہی کی طرف دھکیلا جارہا ہے، نااہل حکمران اقتدار کے مزوں میں مگن ہیں
سات سال میں صوبے کا کوئی ایک بھی ایسا ادارہ نہیں بچا ہے جس کو اس نالائق حکومت نے بحران سے دوچار نہیں کیا ہو
ایک کروڑ نوکریوں کا دعوی کرنے والوں نے سرکاری ملازمین کو بھی دربدر کردیا ہے
آئے روز عوام پر مہنگائی کے بم برسائے جارہے ہیں اور غریب عوام اپنے بچوں کو دو وقت کی روٹی دینے سے بھی قاصر ہیں
حکومت عوام کے ساتھ کئے گئے وعدوں میں مکمل طور پر ناکام ہوچکی ہے
سرکاری ملازمین کے پنشنز سے کٹوتی اور ان میں خرد برد کسی بھی طور پر قابل قبول نہیں
فرشتوں کی حکومت میں حکومتی لوگ احتجاج کرنے والوں کی فریاد سننا بھی گوارہ نہیں کرتے ہیں
پی ڈی اے کی جانب سے پلاٹس کی غیر منصفانہ تقسیم کی عوامی نیشنل پارٹی بھرپور مذمت کرتی ہے
پی ڈی اے ملازمین پچھلے کئی دنوں سے سراپا احتجاج ہیں لیکن صوبائی حکومت کے کسی نمائندہ کو ان کی فریاد سننے کی توفیق نصیب نہیں ہوئی
پلاٹس کی غیر منصفانہ تقسیم کی صاف شفاف انکوائری کرائی جائے اور ملوث افراد کو قرار واقعی سزا دی جائے
اے این پی پی ڈی اے ملازمین کے شانہ بشانہ کھڑی ہے اور ان کے جائز مطالبات کے لئے ہر فورم پر آواز اٹھائے گی
پشاور(پ ر) عوامی نیشنل پارٹی کی صوبائی ترجمان و رکن صوبائی اسمبلی ثمر ہارون بلور نے کہا ہے کہ نئے پاکستان میں عام عوام کے ساتھ سرکاری ملازمین کا بھی معاشی قتل عام جاری ہے لیکن نااہل حکمران اقتدار کے مزوں میں مگن ہیں ۔ حیات آباد پشاور میں پی ڈی اے ملازمین کے احتجاجی دھرنے سے خطاب کرتے ہوئے اے این پی کی صوبائی ترجمان نے کہا کہ خیبر پختونخوا کو تباہی کی طرف دھکیلا جارہا ہے، پچھلے سات سال میں صوبے کا کوئی ایک بھی ایسا ادارہ نہیں بچا ہے جس کو اس نالائق حکومت نے بحران سے دوچار نہیں کیا ہو، ایک کروڑ نوکریوں کا دعوی کرنے والوں نے سرکاری ملازمین کو بھی دربدر کردیا ہے، آئے روز عوام پر مہنگائی کے بم برسائے جارہے ہیں اور غریب عوام اپنے بچوں کو دو وقت کی روٹی دینے سے بھی قاصر ہیں۔ ثمر ہارون بلور نے موجودہ حکومت کو تاریخ کی ظالم ترین حکومت قرار دیتے ہوئے کہا کہ حکومت عوام کے ساتھ کئے گئے وعدوں میں مکمل طور پر ناکام ہوچکی ہے، موجودہ حکمرانوں نے سرکاری ملازمین کو دیوار سے لگانے کی بھر پور کوشش کی ہے،سرکاری ملازمین کے پنشنز اور فنڈز سے کٹوتی اور ان میں خرد برد کسی بھی طور پر قابل قبول نہیں۔ پی ڈی اے مظاہرین کے احتجاج سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ماضی میں اس طرح کے احتجاج ہوتے تو حکمران احتجاج کرنے والوں کے ساتھ بیٹھتے، ان کے اعتراضات سنتے اور ان کے حل کے لئے ضروری اقدامات کرتے، لیکن فرشتوں کی حکومت میں حکومتی لوگ احتجاج کرنے والوں کی فریاد سننا بھی گوارہ نہیں کرتے ہیں، پی ڈی اے ملازمین پچھلے کئی دنوں سے سراپا احتجاج ہیں لیکن صوبائی حکومت کے کسی نمائندہ کو بھی ان کی فریاد سننے کی توفیق نصیب نہیں ہوئی۔ انہوں نے پی ڈی اے کی جانب سے پلاٹس کی غیر منصفانہ تقسیم کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ عوامی نیشنل پارٹی ایسے اقدامات کی بھرپور مذمت کرتی ہے اور متعلقہ حکام سے مطالبہ کرتی ہے کہ اس معاملے کی صاف شفاف انکوائری کرائی جائے اور ملوث افراد کو قرار واقعی سزا دی جائےتاکہ حق حقدار کو مل سکے۔ ثمر ہارون بلور نے پی ڈی اے کے عارضی ملازمین کی مستقلی کا مطالبہ کرتے ہوئے احتجاجی مظاہرین کو یقین دلایا کہ عوامی نیشنل پارٹی پی ڈی اے ملازمین کے شانہ بشانہ کھڑی ہے اور ان کے جائز مطالبات کے لئے ہر فورم پر آواز اٹھائے گی، اس موقع پر عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی انفارمیشن کمیٹی کے رکن حامد طوفان اور سابق رکن صوبائی اسمبلی یسین خلیل بھی ان کے ہمراہ تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں