41

سوشل میڈیا پر گستاخانہ مواد کی تشہیر کا مقدمہ۔۔۔ توہین رسالت صلی اللہ علیہ وسلم کے مرتکب مجرمان کی سزائے موت کے خلاف اپیلوں کی سماعت کے لئے تشکیل دیئے گئے بینچ کی تبدیلی کے لئے چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ کو درخواست دے دی گئی۔۔۔ دو صفحات پر مشتمل درخواست مدعی مقدمہ حافظ احتشام احمد کی جانب سے دی گئی ہے۔۔۔ درخواست میں چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ سے خود کو توہین رسالت صلی اللہ علیہ وسلم کے مرتکب مجرمان کی سزائے موت کے خلاف اپیلوں کی سماعت کے لئے تشکیل پانے والے بینچ سے الگ کرنے کی استدعا۔۔۔ درخواست میں توہین رسالت صلی اللہ علیہ وسلم کے مرتکب مجرمان کی سزائے موت کے خلاف اپیلوں کی سماعت کے لئے نیا بینچ تشکیل دینے کی بھی استدعا کی گئی ہے۔۔۔ درخواست میں چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ کی بینچ میں شمولیت پر اعتراض کی چار وجوہات بتائی گئی ہیں۔۔۔

سوشل میڈیا پر گستاخانہ مواد کی تشہیر کا مقدمہ۔۔۔

توہین رسالت صلی اللہ علیہ وسلم کے مرتکب مجرمان کی سزائے موت کے خلاف اپیلوں کی سماعت کے لئے تشکیل دیئے گئے بینچ کی تبدیلی کے لئے چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ کو درخواست دے دی گئی۔۔۔

دو صفحات پر مشتمل درخواست مدعی مقدمہ حافظ احتشام احمد کی جانب سے دی گئی ہے۔۔۔

درخواست میں چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ سے خود کو توہین رسالت صلی اللہ علیہ وسلم کے مرتکب مجرمان کی سزائے موت کے خلاف اپیلوں کی سماعت کے لئے تشکیل پانے والے بینچ سے الگ کرنے کی استدعا۔۔۔

درخواست میں توہین رسالت صلی اللہ علیہ وسلم کے مرتکب مجرمان کی سزائے موت کے خلاف اپیلوں کی سماعت کے لئے نیا بینچ تشکیل دینے کی بھی استدعا کی گئی ہے۔۔۔

درخواست میں چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ کی بینچ میں شمولیت پر اعتراض کی چار وجوہات بتائی گئی ہیں۔۔۔

درخواست گزار نے چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ کی بینچ میں شمولیت پر اعتراضات کی وجوہات کو پبلک کرنے سے گریز کیا ہے۔۔۔

چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ آئندہ دو روز میں مذکورہ درخواست پر فیصلہ کریں گے۔۔۔

واضح رہے کہ انسداد دہشتگردی عدالت اسلام آباد سے توہین رسالت صلی اللہ علیہ وسلم کے جرم میں سزائے موت پانے والے تین مجرمان عبدالوحید،رانا نعمان رفاقت اور ناصر احمد نے سزائے موت کے خلاف اسلام آباد ہائیکورٹ میں جیل اپیلیں دائر کررکھی ہیں۔۔۔

اسلام آباد ہائیکورٹ نے مذکورہ مجرمان کی اپیلوں کی سماعت کے لئے گزشتہ روز دو رکنی بینچ تشکیل دیا تھا۔۔۔

چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ جسٹس اطہر من اللہ اور جسٹس بابر ستار پر مشتمل دو رکنی بینچ نے گیارہ فروری کو مجرمان کی اپیلوں کی سماعت کرنی ہے۔۔۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں