56

وزیراعلیٰ گلگت بلتستان خالد خورشید نے اسلام آباد میں اٹلی کے پاکستان میں متعین سفیر آنڈریاس فرریریاس (Andreas Ferrarese) سے ملاقات

وزیراعلیٰ گلگت بلتستان خالد خورشید نے اسلام آباد میں اٹلی کے پاکستان میں متعین سفیر آنڈریاس فرریریاس (Andreas Ferrarese) سے ملاقات کی۔ اس موقع پر وزیراعلیٰ گلگت بلتستان خالد خورشید نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اٹلی کی حکومت کی جانب سے گلگت بلتستان کیلئے چند منصوبے شروع کئے گئے ہیں لیکن گلگت بلتستان کیلئے مزید منصوبے شروع کرنے کی ضرورت ہے۔ گلگت بلتستان میں موسمیاتی تبدیلی کے اثرات مرتب ہورہے ہیں۔ سخت موسم اور توانائی کے متبادل ذرائع نہ ہونے کی وجہ سے جنگلات کٹ رہے ہیں۔ پاکستان اور اٹلی کے دوستانہ تعلقات ہیں۔ گلگت بلتستان کی تعمیر و ترقی کیلئے اٹلی کی حکومت سے زیادہ منصوبوں کی تعمیر کی توقع رکھتے ہیں۔ وزیراعلیٰ گلگت بلتستان خالد خورشید نے اٹلی کے سفیر کو حکومت کی جانب سے شروع کئے جانے والے ویلج ڈویلپمنٹ پلان سے بھی آگاہ کیا اور گلگت بلتستان کے دورے کی بھی دعوت دی۔ وزیراعلیٰ گلگت بلتستان خالد خورشید نے کہا کہ حکومت گلگت بلتستان نے ایکو ٹوریزم اور پائیدار سیاحت کے فروغ کیلئے اقدامات کررہی ہے۔ گلگت بلتستان مختلف زبانوں اور ثقافت کے حوالے سے ذرخیز ہے۔ گلگت بلتستان میں مختلف شعبوں میں سرمایہ کاری کے وسیع مواقع موجود ہیں۔ وزیراعلیٰ گلگت بلتستان خالد خورشید نے پرائیویٹ سیکٹر اور کمپنیز کو گلگت بلتستان میں توانائی اور سیاحت کے شعبے میں سرمایہ کاری کی دعوت دیتے ہوئے کہا کہ کمپنیز BOTاور پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کے تحت کام کرسکتے ہیں۔ اٹلی کے سفیر نے وزیراعلیٰ گلگت بلتستان خالد خورشید کو خوش آمدید کہتے ہوئے اس بات کی یقین دہانی کرائی کہ حکومت گلگت بلتستان کے ساتھ مختلف شعبوں میں تعاون کیا جائے گا۔ گلگت بلتستان کا سفر کرنے والے اٹلی کے سیاح وہاں کے قدرتی حسن کی تعریف کرتے ہیں۔ اٹلی کے سفیر نے وزیراعلیٰ گلگت بلتستان خالد خورشید کو اٹلی دورے کی دعوت دی اور کہا کہ ہم نے اٹلی میں پہاڑی علاقوں کی ترقی کیلئے کام کیا ہے اور اس سال کے آخر تک ثقافت، ورثہ کے تحفظ اور مستقل سیاحت (Sustainable Toursim) کے حوالے سے کانفرنس کا انعقاد کیا جارہاہے اٹلی کے مختلف وفود کا گلگت بلتستان کے دورے کو یقینی بنائیں گے۔ اٹلی کے سفیر نے کہا کہ ای ٹی آئی پروجیکٹ کے تحت 20ملین یورو کی مختلف شعبوں میں مزید سرمایہ کاری کی جائے گی۔ گلگت بلتستان کے گلیشئرز کی تفصیلات کو جمع کرنے کے حوالے سے منصوبہ شروع کیا جائے گا۔ اٹلی کی حکومت کی جانب سے سیاحتی شعبے خصوصاً سرمائی سیاحت کے فروغ کیلئے تعاون کیا جائے گا۔ ایکو ٹوریزم کے فروغ کیلئے اٹلی میں کئے جانے والے کامیاب تجربے اور نتائج کی روشنی میں حکومت گلگت بلتستان کو مدد فراہم کی جائے گی۔ بین الاقوامی سطح پر خصوصاً اٹلی میں گلگت بلتستان کو اجاگر کرنے کیلئے اٹلی کے سینئر صحافیوں کے وفد کو گلگت بلتستان کا دورہ کرایا جائے گا جو خصوصی ڈاکومینٹریز اور سیریلز کی عکس بندی کرکے بین الاقوامی چینلوں پر نشر کریں گے۔

وزیراعلیٰ گلگت بلتستان خالد خورشید نے وفاقی وزیر منصوبہ بندی اور ریفامز اسد عمر سے ملاقات کی۔ اس موقع پر وزیراعلیٰ گلگت بلتستان خالد خورشید نے گلگت بلتستان کی تعمیر و ترقی میں خصوصی توجہ دینے پر وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر کا شکریہ ادا کیا۔ وزیراعلیٰ گلگت بلتستان خالد خورشید نے سپیشل پروٹیکشن یونٹ (ایس پی یو) کے ملازمین کی تنخواہوں کی ادائیگی سمیت دیگر مسائل مستقل بنیادوں پر جلد حل کرنے کی سفارش کی۔ وزیراعلیٰ گلگت بلتستان خالد خورشید نے کہا کہ وزیر اعلیٰ سیکریٹریٹ میں ریفامز یونٹ کا قیام عمل میں لایا جارہاہے جس کیلئے آپ کی خصوصی مدد درکار ہے۔ گلگت بلتستان کی تعمیر و ترقی کیلئے پی ایس ڈی پی میں گلگت بلتستان کے شیئر میں اضافہ کیا جائے تاکہ میگا منصوبوں کی تعمیر ممکن ہوسکے اور گلگت بلتستان کے سالانہ ترقیاتی پلان (اے ڈی پی)میں بھی اضافہ کیا جائے۔ بین الاقوامی مالیاتی اداروں کے ذریعے گلگت بلتستان کے ترقیاتی منصوبوں کی فنڈنگ کو ممکن بنانے پر توجہ دیں۔ ملاقات میں پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کے تحت منصوبوں کی تعمیر پر غور کیا گیا اور دیگر وفاقی وزارتوں سے گلگت بلتستان کیلئے فنڈز کی فراہمی کو ممکن بنانے پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر نے کہا کہ گلگت بلتستان کیلئے پی ایس ڈی پی کے تحت فنڈنگ میں اضافہ کیا جائے گا۔ ملاقات میں سی پیک کے تحت گلگت بلتستان میں منصوبے شروع کرنے پر بھی اتفاق کیا گیا۔ اجلاس میں چیئرمین سی پیک اتھارٹی جنرل (ر) عاصم سلیم باجوہ سے گلگت بلتستان میں سی پیک کے تحت منصوبوں کے حوالے سے رابطہ کیا گیا۔ چیئرمین سی پیک اتھارٹی جنرل (ر) عاصم سلیم باجوہ نے کہا کہ گلگت چترال روڈ کی تعمیر کے منصوبے کو ترجیحی بنیادوں پر شروع کیا جائے گا۔ ملاقات میں پی ایس ڈی پی کے منصوبوں کی بروقت تکمیل کو یقینی بنانے اور زیر تعمیر پی ایس ڈی پی منصوبوں کی جلد تکمیل کیلئے پرنسپل اکاؤٹنگ آفیسر کے اختیارات کو چیف سیکریٹری گلگت بلتستان کو منتقل کرنے پر گفتگو ہوئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں