89

ڈی سی لاہور مدثر ریاض سادہ شلوار قمیض کورٹ اور پشاوری چپل پہن کر سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں پیش ہوئے اعلی آفیسر کو عام پاکستانی لباس میں دیکھ کر جسٹس منظور ملک سخت برہم م.

چند دن قبل ڈی سی لاہور مدثر ریاض سادہ شلوار قمیض کورٹ اور پشاوری چپل پہن کر سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں پیش ہوئے اعلی آفیسر کو عام پاکستانی لباس میں دیکھ کر جسٹس منظور ملک سخت برہم ہوئے.

لباس کو نامناسب قرار دیتے ہوئے چیف سکریٹری کو طلب کیا اور شدید سرزنش کر دی کہ تمہارے آفیسر یہ کس طرح کا لباس پہنتے ہیں.

اندازہ کیجئے کہ کس ذہنیت اور گوروں سے مرعوبیت کے شکار لوگ ہمارے سسٹم میں کلیدی عہدوں پر بیٹھے ہوئے ہیں جن کو اب پاکستان کا قومی لباس بھی آفیسروں کے تن پر نامناسب لگتا ہے،ان کو یہ غریبوں کا لباس لگتا ہے.

کہیں انگریزی سے مرعوبیت کہیں لباس سے مرعوبیت،اردو بولنا احساس کمتری،پاکستانی لباس باعث شرمندگی، ہر محکمہ میں لنڈے کے انگریزوں کے ہاتھوں ملک یرغمال ہے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں